انرسس نے چین میں نئی پیداواری تنصیب کے عظیم الشان آغاز کا اعلان کر دیا

AsiaNet 47662

ریڈنگ، پنسلوینیا، 8 دسمبر 2011ء/پی آرنیوزوائر-ایشیانیٹ/

صنعتی بیٹریوں کے دنیا کے سب سے بڑے تیار کنندہ، مارکیٹر اور تقسیم کار انرسس (این وائی ایس ای: ENS) نے آج شوانگ چیاؤ ضلع، چونگ جنگ، عوامی جمہوریہ چین میں اپنی نئی بیٹری تیار کرنے والی تنصیب کے عظیم الشان آغاز کا اعلان کیا ہے۔ ادارے کی دو چینی پیداواری تنصیبات کے ساتھ یہ نیا کارخانہ ٹیلی کمیونی کیشن، نیوکلیئر پاور یوٹیلٹی اور بجلی کی متواتر فراہمی کی صنعتوں کے ساتھ ساتھ متحرک توانائی کے صارفین کی بڑھتی ہوئی ضروریات پوری کرنے کے لیے گنجائش پیدا کرے گا۔ چین کے جغرافیائی مرکز کے قریب واقع نیا کارخانہ تقریباً 4 لاکھ مربع فٹ پر پھیلا ہوا ہے اور آخر کار 1100 سے زائد افراد کو ملازمت دے گا۔

عظیم الشان افتتاحی تقریب میں انرسس کے چیئرمین، صدر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر جونی ڈی کریگ نے کہا کہ “چین اور تمام ایشیائی مارکیٹوں دونوں میں ہماری مصنوعات کی طلب بدستور زیادہ ہے۔ یہ نئی تنصیب موجودہ اور ساتھ ساتھ خطے کے نئے صارفین کے لیے خدمات انجام دے گی۔ یہ ایک جدید تنصیب ہے، یہ عالمی سطح پر ہماری اکتیس پیداواری تنصیبات میں موجود چار بڑی تنصیبات میں سے ایک ہے اور مکمل آپریشنل ہونے کے بعد اِس سے سالانہ 150 ملین کی آمدنی ہونے کی توقع ہے۔

ہدایت برائے مدیران: صنعتی ایپلی کیشنز کے لیے محفوظ توانائی کے حل بنانے کا عالمی رہنما انرسس محفوظ توانائی اور متحرک توانائی کی بیٹریاں، چارجرز، توانائی کے آلات اور بیٹری کے لوازمات تیار اور تقسیم کرتا ہے۔ متحرک توانائی کی بیٹریاں برقی فورک ٹرکوں اور دیگر کمرشل برقی توانائی سے چلنے والی گاڑیوں میں استعمال ہوتی ہیں۔ محفوظ توانائی کی بیٹریاں ٹیلی کمیونی کیشنز اور یوٹیلٹی کی صنعتوں میں مستقل بجلی کی فراہمی اور ایسی متعدد ایپلی کیشنز میں استعمال ہوتی ہیں جنہیں اسٹینڈ بائی بجلی کی ضرورت ہوتی ہے۔ ادارہ 100 سے زائد ممالک میں دنیا بھر میں موجود اپنے سیلز اور مینوفیکچرنگ مقاما ت کے ذریعے بعد از مارکیٹ اور صارفی سپورٹ خدمات فراہم کرتا ہے۔

انرسس کے بارے میں مزید معلومات http://www.enersys.com پر مل سکتی ہیں۔

مستقبل کے حوالے سے بیانات کے بارے میں تنبیہ

یہ اعلامیہ اور اس کے متعلق زبانی بیانات مستقبل کے حوالے سے بیانات کے حامل ہیں جو پرائیوٹ سیکورٹیز لٹی گیشن ریفارم ایکٹ 1995ء، یا ریفارم ایکٹ، کے زمرے میں آتے ہیں، یہ انرسس کی آمدنی کے اندازوں، منصوبوں، مقاصد، توقعات اور ارادوں کے بارے میں ہیں، تاہم یہ صرف اِنہی بیانات تک محدود نہیں ہیں، اور اس اعلامیہ میں شامل دیگر بیانات تاریخی حقائق نہیں ہیں، ایسے بیانات کو “ماننا،” “منصوبہ،” “خواہش،” “توقع،” “قصد،” تخمینہ،” “متوقع،” “ہوگا،” اور اسی جیسے الفاظ کے ذریعے پہنچانا جا سکتا ہے۔ آپریٹنگ کارکردگی، مواقع، یا پیشرفت کے حوالے سے تمام بیانات جس کی توقع انرسس مستقبل میں رکھتا ہے، جس میں فروخت میں اضافے، آمدنی اور آمدنی فی حصص میں پیشرفت، اور مارکیٹ حصص، اور ساتھ ساتھ مستقبل کے آپریٹنگ نتائج کے بارے میں رجائیت یا قنوطیت پسندی، کے بیانات شامل ہیں، ریفارم ایکٹ کے تحت مستقبل کے حوالے سے بیانات کے زمرے میں آتے ہیں۔ مستقبل کے حوالے سے یہ بیانات انتظامیہ کے موجودہ مستقبل کے واقعات اور آپریٹنگ کی کارکردگی کے بارے میں نظریے اور مفروضوں پر مبنی ہیں ، اور جبلی طور پر اہم کاروباری، اقتصادی اور مسابقتی بے اعتباری اور ناگہانی صورتحال اور حالات میں تبدیلی سے وابستہ ہیں، جن میں سے کئی انرسس کے کنٹرول سے باہر ہیں۔ اس خبری اعلامیہ میں بیانات اجراء کی تاریخ کے مطابق جاری کیے گئے ہیں، چاہے وہ بعد ازاں بھی انرسس کی ویب سائٹ پر موجود رہیں یا نہ رہیں۔ انرسس اس خبری اعلامیہ کے اجراء کے بعد پیش آنے والے حالات کے مطابق ان بیانات کو تبدیل کرنے یا ان پر نظر ثانی کرنے کی ذمہ داری نہیں لیتا۔

گو کہ انرسس اس وقت تک مستقبل کے حوالے سے بیانات جاری نہیں کرتا جب تک کہ اس کے لیے معقول بنیاد موجود نہ ہو، لیکن انرسس ان کی درستگی کی ضمانت نہیں دے سکتا۔ متعدد عوامل، جن میں دیگر بھی شامل ہیں، حقیقی نتائج کو مستقبل کے حوالے سے بیانات میں پیش کردہ نتائج سے یکسر مختلف کر سکتے ہیں۔ انرسس کے نتائج پر اثر ڈال پانے والے دیگر عوامل، بشمول آمدنی کے اندازوں، کی فہرست کے لیے سیکوریز اینڈ ایکسچینج کمیشن میں جمع کی گئی انرسس کی دستاویز ملاحظہ کیجیے، بشمول “آئٹم 2۔ مینجمنٹ ڈسکشن ایڈ اینالسس آف فنانشل کنڈیشن اینڈ رزلٹس آف آپریشنز”، اور 2 اکتوبر 2011ء کو ملنے والی مالی سہ ماہی کے اختتام پر پیش کردہ سہ ماہی رپورٹ کے فارم 10-کیو میں “فارورڈ-لوکنگ اسٹیٹمنٹس”۔ مستقبل کے حوالے سے کسی بھی بیان پر بے جا اعتماد نہیں کرنا چاہیے۔

ذریعہ: انرسس

رابطہ: رچرڈ زوڈیما، ایگزیکٹو نائب صدر، 1-800-538-3627