تھیری ایرمان، سی ای او آرٹ پرائس ڈاٹ کام کے ساتھ خصوصی انٹرویو کا دوسرا حصہ (9 اکتوبر 2011ء)

AsiaNet 46709

پیرس، 10 اکتوبر/پی آرنیوزوائر-ایشیانیٹ/

9 صفحات پر مشتمل انٹرویو بیان کرتا ہے کہ کس طرح آرٹ پرائس نے خود کو بازار فن کی معلومات میں عالمی رہنما بنایا اور کس طرح اپنی معیاری مارکیٹ کے ذریعے فن پاروں  کے حجم میں دنیا بھر کا نمبر ایک حلقہ تجارت بنا یا ہے۔ یہ 35 سوالات ،جن میں سے چند سخت بھی ہیں، گزشتہ 20 سالوں میں آرٹ پرائس کی حیرت انگیز تاریخ کو سمجھنے کے قابل بنائیں گے۔ انٹرویو دنیا ، بشمول چین کہ جو نمایاں حلقہ تجارت ہے، کے بازار فن کا عالمی تجزیہ بھی فراہم  کرتا ہے جہاں 2011 کے لیے اس کے نمایاں مقام ہونے کی تصدیق کی جارہی ہے۔اپنے دوسرے طویل انٹرویو کے سلسلے میں تھیری ایرمان نے اسٹاک مارکیٹ میں آرٹ پرائس کے کارناموں کا بھی تجزیہ کیا جس میں 2005ء اور 2011ء میں باضابطہ اسٹاک مارکیٹ میں یورپ میں بہترین اسکورنگ بھی شامل ہے۔

( لوگو: http://www.newscom.com/cgi-bin/prnh/20110609/461260 )

یہ 9 صفحات درستگی کے مسائلکےلئے انگریزی میں دستیاب ہیں۔

1۔ جون کے اوائل میں ہمارے پہلے انٹرویو کے بعد سے آرٹ پرائس اور اقتصادی بازار میں بہت کچھ ہوچکا ہے۔

ہمارے پاس بہت سے سوالات ہیں جن کے ہم تفصیلی جوابات دینا چاہتے ہیں۔ پہلا سوال یہ کہ ، آپ کے خیال میں آرٹ پرائس کے بارے میں جون 2011ء میں بورشیا کو دیا  گیا خصوصی انٹرویو– جو گوگل پر مختلف زبانوں میں دستیاب ہے (اور اب تک 210,000 مرتبہ دیکھا جاچکا ہے) – نے عوام میں انتہائی دلچسپی حاصل کی؟ (جون 2011ء میں دیا گیا انٹرویو: http://serveur.serveur.com/Press_Release/pressreleaseEN.htm#20110606 )

2۔ اس پہلے انٹرویو میں آپ نے آرٹ پرائس کے بے مثال قانونی تنازعات کی بلاتعطل ترتیب کے بارے میں بات کی۔ تو کیا ادارے کی ترقی پھولوں کی سیج نہیں؟

3۔  اس طرح کی زبان شاید آپ کے چھوٹے حصص کنندگان سامعین کے لیے مناسب ہوگی، لیکن کیا یہ اقتصادی پیشہ وروں کے لیے کافی ہے!

4۔  تو آپ کی نظر میں، مندرج اداروں کی باضابطہ بازاروں میں جاری ہونے والا اعلامیہ محض ایک سوچا سمجھا طریقہ ہے اور اس کے علاوہ کچھ نہیں؟

5۔ تو پھر سینئر منتظمین کی جماعت کو کیا کرنا چاہیے؟

6۔ چلیے 20 جولائی 2011ء کے قانون کے بارے میں دوبارہ بات کرتے ہیں جس نے فرانسیسی قانون کے اندر یورپی سروسز ہدایت کا انقلاب برپا کردیا تھا، اور آن لائن نیلامی پر پڑنے والے اثرات کے بارے میں بھی کچھ بتائیے۔

یہ آپ کے لیے کیا معنی رکھتا ہے؟

7۔ تبدیلی کی مزاحمت جسے آپ “کاسٹ” کہتے ہیں کے لیے یہ پر عزم سخت فیصلہ، کیا یہ اقتصادی منطق میں اپنی جڑیں رکھتا ہے یا سماجی حیثیت کا ایک سادہ نقصان  کا حامل ہے؟

8۔ یہ قانون یکم ستمبر 2011 سے نافذ العمل ہوا۔ تو آپ کس کا انتظار کر رہے ہیں؟

9۔ ہمارے کچھ اراکین نے کہا کہ فیگارو اخبار کود کو نیلامی کی دنیا میں پیش کرنے کا  ارادہ رکھتا ہے۔

10۔ خصوصاً، آرٹ پرائس میں نیلامی کس طرح کی جاتی ہے؟ کیا یہ ای بے کی طرح ہوتی ہے؟

11۔ کیا آپ ہمیں بتانا پسند کریں گے کہ یہ دستاویزی اکاؤنٹ کس طرح کام کرے گا؟

12۔ تو آپ کے مطابق آرٹ پرائس میں تحفظ عمومی نیلام گھروں سے قریباً زیادہ ہو سکتی ہے۔

13۔ ہمارے پہلے انٹرویو میں آپ نے بتایا کہ آرٹ پرائس حلقہ تجارت میں درحقیقت کس طرح کام کرتا ہے، صارف کی ضرورت کے مطابق جو بیچنا چاہتے ہیں مثلا  آرمنڈ کی جانب سے ایک مجسمہ: “لے پوبیلے آرگنوکوئے” اپنے لاکھوں صارفین کی فہرست سے اخذ کرتے ہوئے  وہ تمام صارف جو آرمنڈ کے شائق ہیں، خاص طور پر ان کے مجسمے اور مزید خاص طور پر اس دور کہ جس میں  انہوں نے پوبیلے آرگنوکوئے تیار کیے۔ اس کے بعد سے بہر حال آپ نے مزید پیش قدمی کی، وہ کیا ہے؟

14۔ ہم اصل میں یہاں کس چیز کے بارے میں بات کر رہے ہیں؟ آرٹ پرائس کے لیے امکانی حریفوں یا امکانی صارفین؟

15۔ امکانی صارفین سے آپ کی کیا مراد ہے؟ جیسا کہ آپ نے کہا کہ آپ کے خبری اعلامیہ نیلامی گھروں  کے تقریباً 83 فیصد اور ماہرین فن  پہلے ہی آپ کے ساتھ کام کرتے ہیں۔

16۔ ان کا کاروباری ماڈل کیا ہے اور آپ کا فائدہ کہاں ہے؟

17۔ تو حقیقی معنی میں اس کا مطلب ہے کہ آرٹ پرائس  آئی پی او میں شرکت کرنے جارہا ہے۔

18۔ ساؤتھ بے کی سرمایہ کاری  سے کون تجاوز  کرسکتا ہے۔

19۔ تو کیا اس کا مطلب یہ ہے کہ دور حاضر کے فنی میلے  ختم ہورہے ہیں جیسا کہ ہم جانتے ہیں۔

20۔ موجودہ اقتصادی بحران میں جو کہ غیر معمولی ہے، فن واقعی ایک محفوظ پناہ گاہ ہے؟

21۔ اس سے محسوس ہوتا کہ  ہمیں بازارِ فن کی بنیاد پر آلات اخذ کرسکتے ہیں؟

22۔ ان کے پیشہ ور خریدار اور ان کے اقتصادی صارفین کون سے ہوسکتے ہیں؟

23۔ آپ ایسا کیوں سمجھتے ہیں – اس قسم کے انقلابی تبدیلیوں کے ساتھ درپیش–مغربی بازارِ فن کے موجودہ ڈھانچے بہت قدامت پسند ہیں؟

24۔ آپ کے اندراج کی دستاویز میں “خطرے کے عوامل” کے حصہ میں “اہم شخصیت” کے ذیل میں، ہم نے دیکھا کہ آپ نے اپنے آپ کو ایک فن کار – مجسمہ ساز رکھا ہے۔ کیا یہ فن کار کی قریبی معلومات  کا خصوصی فائدہ ہے؟

25۔ کیا آپ اب بھی اپنے کام کے لیے وقت نکال پاتے ہیں؟

26۔ بازار کو دس گنا کرنے کے لیے کتنا عرصہ درکار ہوگا؟

27۔ نوجوان فن کاروں کے تیار کردہ کاموں کے لیے ہم اب بھی بہت بڑی قیمت کے حصول دیکھ رہے ہیں؟

28۔ کیا یہ ان میں سے ایک ہے جو تمام دنیا کے اکثر نیلامی گھروں  کو آرٹ پرائس کی جانب متوجہ کر رہی ہے؟

29۔ کتنی دور آرٹ پرائس اپنی معلومات پھیلائے گی، مفت یا مع معاوضہ؟

30۔ پہلے انٹرویو کے بعد آپ کا آرٹ نیٹ کے ساتھ تنازع ہوا۔ وہ کس بارے میں تھا؟

31۔ اسٹاک مارکیٹ کی بات کرتے ہیں، آرٹ پرائس کیسا جارہا ہے؟

32۔ کیا آپ کے مخاطب وہی ہیں جو جون 2011ء میں ہمارے پہلے انٹرویو میں تھے، اس موسم گرما میں حادثے کے باوجود؟

33۔ ایمانداری کے ساتھ ، مغربی معیشت کے بارے میں آپ کا نقطہ نظر کیا ہے؟

34۔ خبروں میں کیا آرہا ہے، آپ اسٹیو جوبز کے بارے میں کیا خیال کرتے ہیں جن کا ابھی انتقال ہوا ہے؟

35۔ براہ مہربانی مجھے سوال دہرانے دیجیے جو میں نے پہلے انٹرویو میں پوچھا تھا: کیا آپ آرٹ پرائس کے مستقبل کے بارے میں کوئی پیش گوئی رکھتے ہیں؟

تھیری ایرمان:

میں یقین دہانی کرواتا ہوں کہ ہم نے اپنی وابستگیوں کو 1999ء کے کوائف نامہ میں درج  ذمہ داریوں سے زیادہ  رکھا ہوا ہے، 2000ء میں NASDAQ کے بحران، 11 ستمبر 2011ء کے حملوں، 2003ء کی عراق جنگ، 2007ء میں شروع ہونے والے بڑے اقتصادی بحران سے گزرا اور جو کہ اب ایک بھاری ریاستی قرض کا حادثہ بن گیا ہے۔  میں جانتا ہوں کہ بہت کم ادارے باضابطہ مارکیٹ میں درج ہیں جو کبھی سرمائے کے اضافے کے بغیر بچ گئے اور جنہوں نے حاصل کیا اس عرصے میں ایک نمایاں عالمی مقام! جون 2011ء کے انٹرویو کے مقابلے میں آرٹ پرائس کے مستقبل کے بارے میں اپنا مقام تبدیل کیا ہے کیونکہ معاہدوں اور رابطوں کو دیکھتے ہوئے جو ہمیں نے 20 جولائی 2011ء کے قانون کو اپنانے کے بعد سے تین مہینوں میں کیے، میں سمجھتا ہوں کہ ہم نے آرٹ پرائس کی صرف 5 فیصد کہانی تک رسائی حاصل کی ہے اور میں یقین رکھتا ہوں کہ مستقبل کی ہماری تاریخ زیادہ تر ایشیا میں ہوگی۔

مکمل انٹرویو:

http://serveur.serveur.com/Press_Release/pressreleaseEN.htm#20111010

ذریعہ: http://www.artprice.com© 1987-2011 تھیری ایرمان

پہلا انٹرویو پڑھنے کے لیے: 5 جون 2011 ،آرٹ پرائس ڈاٹ کے سی ای او تھیری ایرمان کے ساتھ خصوصی انٹرویو:

http://serveur.serveur.com/Press_Release/pressreleaseEN.htm#20110606

الکیمی اور آرٹ پرائس کی کائنات دریافت کریں:

http://web.artprice.com/video/

آرٹ پرائس 27 ملین سے زائد نیلامی کی قیمتوں اور 4 لاکھ 50 ہزار فن کاروں کی فہرستوں کا احاطہ کرنے والے آرٹ مارکیٹ انفارمیشن کا بین الاقوامی رہنما ادارہ ہے۔ آرٹ پرائس امیجز (ر) دنیا بھر میں آرٹ مارکیٹ کی معلومات کے سب سے بڑے ڈیٹا بیس پر لامحدود رسائی فراہم کرتا ہے، جو 1700ء سے اب تک کے 108,000,000 تصاویر اور فن پاروں کی کندہ کاری کی لائبریری کا حامل ہے۔ آرٹ پرائس 3600 بین الاقوامی نیلام گھروں سے معلومات سے اپنے ڈیٹا بیس کو مستقل بڑھاتا جا رہا ہے اور دنیا بھر  کے 6300 ابلاغی ابواب کو آرٹ مارکیٹ کے رحجانات پر روزانہ معلومات فراہم کرتا ہے۔ آرٹ پرائس اپنے 1,300,000 اراکین (ممبر لاگ ان) کو معیاری حوالہ جات پیش کرتا ہے اور فن پاروں کی خرید و فروخت کی دنیا کی سب سے بڑی مارکیٹ ہے (ذریعہ: آرٹ پرائس)۔

آرٹ پرائس یورو نیکسٹ پیرس: یورو کلیئر : 7478 – بلوم برگ: پی آر سی – رائٹرز: اے آر ٹی ایف سے یورو لسٹ میں مندرج ہے۔

آرٹ پرائس اعلامیے:

http://serveur.serveur.com/press_release/pressreleaseen.htm

اصل وقت میں آرٹ مارکیٹ از آرٹ پرائس بر ٹویٹر:

http://twitter.com/artpricedotcom/

رابطہ: ہوزیتے مے

ٹیلی فون: +33-(0)478-220-000

ای میل: ir@artprice.com

ذریعہ: آرٹ پرائس ڈاٹ کام