وِزمان: نقل و حرکت کے لیے دنیا کے سب سے اہم تجارتی میلے کی نقاب کشائی

AsiaNet 46283

فرینکفرٹ ایم مین اوربرلن، 13 ستمبر/پی آرنیوزوائر-ایشیانیٹ/

– 1012 نمائش کنندگان اور 183 ورلڈ پریمیئرز کے ساتھ آئی اے اے کا آغاز – کئی نمونے پہلے سے “متحرک”

پیر کو فرینکفرٹ ایم مین میں آئی اے اے کی افتتاحی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے میتھیاس وِزمان نے زور دیا کہ “دنیا کے سب سے اہم تجارتی میلہ برائے نقل و حرکت، آئی اے اے ایک بے مثال پروگرام پیش کرتا ہے جس میں 183 عالمی پریمیئرز بھی شاملہیں۔ صرف گاڑیاں بنانے والے ادارے ہی 89 عالمی پریمیئرز کی نمائندگی کر رہے ہیں۔ ان میں سے نصف سے زائد، حقیقتاً 45، جرمن گروپ برانڈز میں سے ہیں۔ فراہم کنندگان یہاں 94 عالمی پریمیئرز کے حامل ہیں۔ مجموعی طور پر 32 ممالک سے تعلق رکھنے والے 1012 نمائش کنندگان 64 ویں آئی اے اے کارز میں موجود ہیں؛ گزشتہ ہفتے میں پانچ نئے چھوٹے اسٹینڈز بھی شامل کیے گئے۔ اس کا مطلب ہے کہ ہم آئی اے اے 2009ء (781 نمائش کنندگان) کے مقابلے میں کہیں زیادہ کے حامل ہیں، اور آئی اے اے 2007ء کی بڑی تعداد کے تقریباً برابر پہنچ چکے ہیں، جو بہت اچھے معاشی مرحلے پر منعقد ہوی تھی۔ نمائش کے لیے مقام 2 لاکھ 35 ہزار مربع میٹر پر پھیلا ہوا ہے اور ایک نیا ریکارڈ ہے۔” 64 ویں بین الاقوامی موٹر شو (آئی اے اے) کارز کا باضابطہ افتتاح 15 ستمبر کو جرمن چانسلر اینجلا مرکل نے کیا۔ 90 سے زائد ممالک کے 10 ہزار سے زیادہ صحافیوں کو دو ابلاغی ایام (13و 14 ستمبر) کے لیے اجازت نامے جاری کیے گئے جس میں تقریباً 90 پریس کانفرنسز ہوئیں۔ دو تجارتی ایام (15 و 16 ستمبر) کے بعد آئی اے اے 17 سے 25 ستمبر تک آئی اے اے عوام کے لیے کھول دیا جائے گا۔ آئی اے اے 2011ء کا نعرہ ہے ” ایک معیار کی حیثیت سے مستقبل کی آمد”۔

وزمان نے کہا کہ “آئی اے اے گاڑیاں بنانے والوں کے لیے ایک تجارتی میلہ ہے جو دنیا بھر میں کہیں بھی سب سے زیادہ ذرائع ابلاغ کی توجہ حاصل کرتا ہے۔ اعلیٰ پائے کے سیاست دان اس کا دورہ کرتے ہیں: محترمہ مرکل کے علاوہ ہم توقع کرتے ہیں کہ جرمن کابینہ کے وزراء بشمول وفاقی وزیر برائے معیشت فلپ روزلر اور وفاقی وزیر برائے ذرائع نقل و حمل پیٹر رامسویر بھی دورہ کریں گے۔ جرمنی کی پانچ اعلیٰ ریاستی شخصیات نے اعلان کیا ہے کہ وہ شرکت کریں گے، جن میں شامل ہیں –بلاشبہ- وولکر بوفیئر جو آئی اے اے کی افتتاحی تقریب میں ہیسیائی ریاست کی اعلیٰ شخصیت کے خطاب کی روایت برقرار رکھیں گے۔ ریاستی حکمران کرٹ بیک (رائن لینڈ-پیلاٹائنیٹ)، ونفرائیڈ کریچ مان (سار لینڈ) بھی موجود ہوں گے۔ فرینکفرٹ ایم مین کی میئر پیٹرا روتھ بھی آئی اے اے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کریں گی۔ ای یو کمشنر گونتھر اوٹنگر یورپی اتحاد کی نمائندگی کریں گے۔ بھارت کی بھاری صنعتوں کے وزیر پرافل پٹیل بھی یہاں ہوں گے، اور برطانیہ کے وزیر مملکت برائے کاروبار و کاروباری ادارے مارک پرسک بھی شرکت کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔

آئی اے اے روایتی طور پر فارمولا 1 ریسنگ ڈرائیوروں سے ملنے کا مقام بھی ہے۔ ہماری تازہ معلومات کے مطابق سباستیان ویٹل (ریڈ بل)، مائیکل شوماخر اور نیکو روزبرگ (دونوں مرسڈیز جی پی)، اور ایڈرین سوتل (فورس انڈیا) آئی اے اے میں آئیں گے۔ مزید برآں ریسنگ کے عظیم نام جیکی اکس، ہانس-جاؤخم اسٹک اور والٹر رویرل بھی دورے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔

وزمان نے نشاندہی کہ نمائش کنندہ ادارے کئی ہفتوں سے اپنے اسٹینڈز بنانے میں مصروف تھے۔ یہ اگورا پر آڈی کے نئے پویلین، ڈیاملر کی جانب سے “فیسٹ ہال” کی تبدیلی، بی ایم ڈبلیو کا ہال 11 میں  محنت سے تیار کردہ سیٹ اور کئی دیگر اسٹینڈز پر صادق آتا ہے۔ نمائش کنندگان نے 15 ہزار سے زائد افراد کو روزگار فراہم کیا تاکہ وہ دنیا کے اہم ترین آٹوموٹو ٹریڈ شو کے لیے تیار ہو سکے اور اپنی پریزنٹیشن کا انتظام کر سکیں۔

وزمان نے زور دیا کہ “یہ سب ایک مقصد کے لیے ہے یعنی کہ آئی اے اے کا دورہ کرنے والے مہمانوں کو ایک شاندار اور بے مثال مقام پر صنعت کی پیش کردہ دلچسپ ترین ایجادات دکھانا۔ آئی اے اے میں ہم صرف تمام اہم گاڑیاں بنانے والے اداروں کو ہی نہیں بلکہ تمام بڑے اور درمیانے حجم کے فراہم کنندگان ، جو دنیا بھر میں تیزی سے متحرک ہو رہے ہیں اور آٹوموبائلز کے ساتھ منسلکہ قدر کے تین چوتھائی کے حامل ہیں، کو بھیدیکھ سکتے ہیں، یہ چیز فرینکفرٹ کو دیگر تمام تجارتی میلوں سے جدا کرتی ہے۔”

تاہم، انہوں نے گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ یہ آئی اے اے ایک مخصوص لحاظ سے اپنے پیشروؤں سے مختلف ہے: “کسی بھی آئی اے اے میں اتنی کاریں ‘متحرک’ نہیں رہیں۔کوئی اسے’متحرک آئی اے اے’ بھی کہہ سکتا ہے،” وی ڈی اے کے صدر نےکہا۔ مثال کے طور پر انہوں نے ہال 11 اور  اوپن-ایئر سائٹ 11 میں بی ایم ڈبلیو اور پویلین میں آڈی سرکٹ کی ڈرائیونگ سرگرمیوں کا حوالہ دیا۔ ہال 9 کے جنوب میں فورڈ مہمانوں کو سرکٹ کا تجربہ کرنے کا موقع پیش کرتا ہے، جہاں آئی اے اے ممان بھی خود سواری کا لطف اٹھا سکتے ہیں۔ فیسٹ ہال (ہال 2) کے علاوہ ڈیاملر ڈرائیونگ کے مواقع کے ساتھ اپنے اوپن-ایئر مقام کا حامل ہے۔ جیپ نے ایف12/ایف 13 اوپن-ایئر سائٹ میں اپنا آف-روڈ سرکٹ “کیمپ جیپ” بنایا ہے۔  فراہم کنندہ ویلیو اوپن-ایئر مقام ایف10 میں اپنے خودکار پارکنگ سینسر کے استعمال کا مظاہرہ کر رہا ہے۔

روایتی آئی اے اے آف-روڈ سرکٹ ہال 10 (ایف 13) کے جنوب مشرق میں واقع ہے۔ کل 24 فور-وہیل-ڈرائیو گاڑیاں مہمانوں کا انتظار کر رہی ہیں، جن میں ڈیاملر، ہیونڈے، اوپیل، شکوڈا، سانگ یونگ، سوزوکی، ووکس ویگن  پسنجر گاڑیاں اور ووکس ویگن کمرشل گاڑیاں شامل ہیں۔ گیارہ مختلف ادارے اپنے نئے ماڈلز میں “آن-روڈ” ٹیسٹ ڈرائیوز پیش کر رہے ہیں۔ تو بحیثیت مجموعی 200 گاڑیوں کا بیڑہ دستیاب ہے۔ آڈی، اوپیل اور سیٹ، کے ساتھ سٹروئن، پیجو اور رینالٹ، بمعہ جنوبی کوریا سے ہیونڈے اور کیا اور شیورلے ہیں۔ ارڈگیس موبل جی ایم بی ایچ اور ویلیو آئی اے اے پر چھ کاروں کو حامل ہیں۔ اور ہال 4 (ایف 4) کے آگے درجن بھر برقی گاڑیاں بھی ہیں جو ایک خاموش ڈرائیو کرنے کے لیے منتظر ہیں۔

وزمان نے زور دیا کہ “صرف آئی اے اے پاورٹرینز کی مکمل رینج پیش کرتا ہے، جس میں آپٹمائزڈ کلاسیکل پاورٹرینز اور ہائبرڈائزیشن، پلگ-اِن ای ویز اور رینج ایکسٹینڈرز شامل ہیں، جو مکمل طور پر سو فیصد بیٹری سے تقویت شدہ برقی کاریں اور فیول سیلز کی حامل گاڑیاں ہیں۔” انہوں نے کہا کہ “ہال آف الیکٹرک موبلٹی” ان نئی قسم کی پاورٹرینز کی مکمل رینج کو ظاہر کرتا ہے – جو آئی اے اے میں ایک اور بے مثال خصوصیت کا اضافہ ہے۔

آئی اے اے کا منتظم اور “ہال آف الیکٹرک موبلٹی” بانی وی ڈی اے “برقی تحریک کے نظام” کے ساتھ ایک نیا طریقہ اختیار کر رہا ہے –ایسا طریقہ جو نمائش کنندگان کے لیے برقی نقل و حرکت کی سرگرمیوں کو اپنے دیگر اسٹینڈز پر سہارا دینا اور مکمل کرنا ممکن بنائے گا۔ “آئی اے اے میں ہم 20 ہزار مربع میٹر کے نمائشی رقبے کے حامل ہیں جسے برقی نقل و حرکت سے وابستہ کیا گیا ہے۔ اس طرح آئی اے اے برقی نقل و حرکت کے لیے دنیا کا سب سے بڑا تجارتی میلہ ہے،” وی ڈی اے کے زور دیتے ہوئے کہا۔ مزید برآں 21 ستمبر کو آئی اے اے میں “الیکٹرک موبلٹی کانگریس” کا انعقاد ہوگا جس میں  معروف مہمان شرکت کریں گے اور اسے وی ڈی اے نے دیگر صنعتی اداروں (بی ڈی آئی، بی ڈی ای ڈبلیو، بٹ کام، وی سی آئی اور زیڈ وی ای آئی) کے تعاون سے منعقد کیا ہے۔ تقریباً 400 مہمانوں نے کانگریس میں شرکت کے لیے اندراج کروایا ہے، جس کا مطلب ہے کہ تقریب کی نشستیں پہلے ہی مکمل طور پر محفوظ ہو چکی ہیں۔

صنعت کی مستقبل کی دوسری اہم ترین ٹیکنالوجی، نیٹ ورکڈ کار، کے موضوع پر 22 ستمبر کو وی ڈی اے اور بٹ کام “کار آئی ٹی” کانگریس کا انعقاد کرے گا، جو اس اہم شعبے میں رحجانات اور جدت طرازی کی ترجیحات کا جائزہ لے گا۔ آئی اے اے میں مجموعی طور پر 25 ماہرین اور ملکوں کے موضوعات پر تقاریب ہوں گی، جن میں آئی اے اے یوم بھارت، آئی اے اے یوم چین، اور یوم سلواکیہ معاشیات، شامل ہیں۔ وی ڈی اے ڈیزائن ایوارڈ بھی پانچویں مرتبہ آئی اے اے میں پیش کیا جائے گا۔

آئی اے اے آنے والی نسلوں کی حوصلہ افزائی کے لیے دیگر کسی بھی ہم مقابل نمائش کے مقابلے میں زیادہ تقاریب رکھتا ہے۔ اس میں پروگرام “GoIng” شامل ہے جو گرامر اسکول کے آخری سالوں میں موجود اُن بچوں اور ان تقریباً 900 اسکول طالب علموں اور ان کے اساتذہ کے لیے ہے جنہوں نے اپنا اندراج کروایا ہے، جو 2009ء کے مقابلے میں دوگنی تعداد ہے۔ اسی کے متوازی پروگرام بعنوان “WorkING” ہے جو یونیورسٹیوں اور کالجوں میں پڑھنے والوں کے لیے ہے۔ وزمان نے کہا کہ “ثالثاً، ہمارے پاس آئی اے اس اسکول مہم کے لیے بھی بہت اچھی تعداد میں رجسٹریشنز موجود ہیں: جس میں اب تک 18 ہزار سے زائد اسکول کے بچوں نےاپنے اساتذہ کے ساتھ آنے کے لیے خود کو مندرج کروایا ہے۔ یہ بھی ایک نیا ریکارڈ ہے۔”

وزمان نے نمایاں کرتے ہوئے کہا کہ “آئی اے اے میں عوامی دلچسپی کا فطری مرکز عالمی پریمیئرز ہیں۔ دنیا کا کوئی بھی تجارتی میلہ جدت طرازیوں کے ایسا شاندار نظارہ پیش نہیں کرتا۔” اس میں الیکٹرک پاور ٹرین کے ساتھ آڈی اے2 خیال کی تحقیق، اے5، اے6 ایوانٹ، اے8 ہائبرڈ، آر8 اسپائیڈ جی ٹی اور آڈی اربن کونسپٹ شامل ہے۔ بی ایم ڈبلیو اپنی نئی بی ایم ڈبلیو1-سیریز، بی ایم ڈبلیو ایم5، 6-سیریز کوپ، منی کوپ اور آئی3 اور آئی8 کونسپٹ کی نمائش کر رہا ہے۔ ڈیاملر نئی مرسڈیز بینز بی-کلاس، نئی ایم-کلاس، ایس ایل ایس اے ایم جی روڈسٹلر، ایس ایل کے 250 سی ڈی آئی، ایس ایل کے 55 اے ایم جی، اسمارٹ فورٹو الیکٹرک ڈرائیو، اسمارٹ فوروژن اور ریسرچ وہیکل ایف 125 پیش کر رہا ہے!

فورڈ بھی متعدد ورلڈ پریمیئرز پیش کر رہا ہے، جس میں فورڈ ایووس کونسپٹ کار، فورڈ فوکس ایکونیٹک، فورڈ فوکس ایس ٹی اور فورڈ فیسٹا ایس ٹی کا پیداواری ورژن شامل ہیں۔ اوپیل اوپیل زفیرا ٹاؤرر، ایسٹرا جی ٹی سی اور اوپیل کومبو کے عالمی پریمیئرز رکھتا ہے۔ وہ اوپیل ایمپیرا کے جرمن پریمیئر کا جشن بھی منا رہا ہے، جو آئی اے اے میں رینج ایکسٹینڈر کی حامل پہلی مسافر کار ہے ۔ پورش کی توجہ اپنی نئے پورش 911 کیریرا کے عالمی پریمیئر پر مرکوز ہے۔ادارےنے اپنی نئی پینامیرا ڈیزل، 911 جی ٹی 3 آر ایس 4.0 اور پورش کے مین ایس بلیک ایڈیشن کو بھی نظارے کے لیے پیش کیا ہے۔ ووکس ویگن کی توجہ اپنی نئی چھوٹی کار وی ڈبلیو اپ! پر مرکوز ہے۔ اور بیٹل اپنے یورپی تجارتی میلے کے پریمیئر پر مسرور ہے۔ مزید برآں ووکس ویگن برقی قوت کی تحقیقی گاڑی این آئی ایل ایس کو بطور ایک نشستی شہری گاڑی کی شکل میں پیش کر رہا ہے۔ بین الاقوامی ساخت گر اور کئی پریمیئرزکے بھی حامل ہیں۔

وزومان نے کہا کہ “فراہم کنندگان کی جدت طرازیوں کی حمایت، خصوصاً، مکمل ترسیل، متبادل پاورٹرینز، کم وزن کی ساخت – با الفاظ دیگر، کاربن ڈائی آکسائیڈ میں مزید کمی کے لیے اہم حصہ ہیں۔” اور انہوں نے چند مثالیں بھی دیں: زیڈ ایف آئی اے اے میں ایک نئی 9 گیئر کی خودکار ٹرانسمیشن پیش کرے گا جو 16 فیصد تک کی ممکنہ ایندھن بچت پیش کرتا ہے۔ کانٹی نینٹل ایک یورپی ساخت گر کے برقی گاڑیوں کے بیڑے کے لیے مقررہ برقی موٹر کی بڑی سیریز کی پیداواری کے آغاز کے لیے آئی اے اے کو علامت بنا رہا ہے۔ انتہائی موثر ہم عصر مشین کی پیداوار کو زمین کے کمیاب عناصر کی ضرورت نہیں جو نسبتاً مہنگے ہیں اور جن کی طویل المیعاد دستیابی کو ماہرین مشکل سمجھتے ہیں۔ مزید برآں، ادارہ گھومنے کی بہتر مزاحمت کے حامل ٹائر پیش کر رہا ہے جو ایندھن کی کھپت کو 3 فیصد کم کرتے ہیں۔

پہلی بار شیفلر گروپ آئی اے اے میں اپنے 500 مربع میٹر کے اسٹینڈ کا حامل ہے (اس نعرے کے ساتھ ” مستقبل کی موثر نقل و حرکت”) اور اس ضمن میں دو خیالی تحقیق پیش کر رہا ہے۔ “ایڈوانسڈ ڈرائیو” اور”ای سلوشنز” کہلانے والی ان نمائشوں نے مہمانوں کو توانائی بچت اور مستقبل کے حوالے سے پاور ٹرینز کی مختلف اقسام پر مشتمل ادارے کے وسیع پورٹ فولیو پر گہری نگاہ ڈالنے کا موقع دیا ہے۔

اور بوش مظاہرہ کر رہا ہے کہ معیاری انجنوں اور ٹرانسمیشن میں توانائی بچت معاون نظام کے لیے ہائبرڈ اور ڈاؤن سائزنگ خیالات کے ساتھ کس طرح 30 فیصد تک ایندھن کی بچت حاصل کی جا سکتی ہے۔ وزمان نے کہا کہ “فراہم کنندگان بیٹری ڈیولپمنٹ میں بھی اتنی ہی پیشرفت کر رہے ہیں جتنی کہ ڈرائیور کی مدد کے نئے نظاموں میں، مثال کے طور پر مڈ-رینج ریڈار سینٹر درمیانی اور پیچیدہ کلاسز میں ایمرجنسی بریکنگ کے نظاموں کے لیے سازگار ہے۔” آئی اے اے میں مہمانوں کی متوقع تعداد کے بارے میں وزمان نے کہا کہ “ہم ایک زبردست آئی اے اے کی توقع کرتے ہیں۔ ہم پرامید ہیں کہ ہم 2009ء کے نتائج پر سبقت لے جائیں گے۔ اس وقت میں، بحران کے دوران، ہم نے 7 لاکھ 50 ہزار مہمانوں کی توقع کی۔ لیکن 80 ہزار سے اوپر آئے۔ ہم اپنی توقعات ان اعداد و شمار کی بنیاد پر رکھ رہے ہیں۔ لیکن سب سے پہلے نقل و حرکت کے لیے اہم ترین تجارتی میلے میں 90 ورلڈ پریمیئرز کے خیرمقدم کے لیے ‘نقاب کشائی’ ہے!”

رابطہ:

ایکے ہارٹ روٹر

وی ڈی اے – پریس ڈپارٹمنٹ

ٹیلی فون: +49 30 897842-120

ای میل: rotter@vda.de

ذریعہ: وی ڈی اے وربینڈ ڈیر آٹوموبائل انڈسٹری ای وی