این ٹی ٹی کام سمندر پار ڈی ڈاس حملوں کے لیے کلاؤڈ-بیسڈ ٹریفک اینالسس سسٹم کو وسعت اور ٹوکیو میں پی او پی کو مضبوط کرے گا

AsiaNet 46211

ٹوکیو، 7 ستمبر/ کیوڈو جے بی این-ایشیانیٹ/

این ٹی ٹی کمیونی کیشنز کارپوریشن (این ٹی ٹی کام) نے 7 ستمبر کو اعلان کیا ہے کہ وہ آسٹریلیا، فرانس، جرمنی، ہانگ کانگ، ملائیشیا، سنگاپور، جنوبی کوریا، تائیوان، نیدرلینڈز اور برطانیہ میں تقسیم شدہ ڈینائل-آف-سروس (ڈی ڈاس) کے کلاؤڈ-بیسڈ ٹریفک اینالسس کو متعارف کر کے اپنی گلوبل آئی پی نیٹ ورک سروسز کو بہتر بنائے گا۔ سروس کے لیے درخواستیں 15 ستمبر سےقبول کی جائیں گی۔

این ٹی ٹی کام نے یہ بھی اعلان کیا ہے کہ وہ اپ گریڈ ہو چکا ہے اور اعلیٰ معیار کی عالمی خدمات کے لیے ٹوکیو میں سروس کے لیے ایک پوائنٹ آف پریزنس (پی او پی) شامل کرے گا۔

این ٹی ٹی کام ڈی ڈاس حملوں کے لیے جولائی 2009ء سے جاپان میں اپنے کلاؤڈ-بیسڈ ٹریفک اینالسس سسٹم کو پیش کر رہا ہے، جسے ٹریفک اینالسس سسٹم کا نام دیا گیا ہے۔ یہ سسٹم صارفین کو آئی پی نیٹ ورکس، بشمول آئی ایس پیز اور آئی پی نیٹ ورکس چلانے والے ڈیٹا سینٹر آپریٹرز کو بڑھتے ہوئے حملوں کے لیے خلاف زیادہ قوت سے نمٹنے کی سہولت دیتا ہے۔ جاپان نیشنل پولیس ایجنسی کے مطابق 2010ء میں دنیا بھر میں ڈی ڈاس حملوں میں اضافہ ہوا، جن میں 80 فیصد سے زائد حملے چین اور امریکہ میں ہوئے جن کے بعد ترکی، سنگاپور اور جنوبی کوریا آتے ہیں۔ این ٹی ٹی کام کا بین الاقوامی سطح پر ڈی ڈاس کے لیے ٹریفک اینالسس پیش کرنا اس رحجان کا براہ راست نتیجہ ہے۔

گلوبل آئی پی نیٹ ورک سروس وابستہ ویب پورٹل کے ذریعے ایک اختیاری سروس کے مطابق پیش کی جائے گی۔ ڈی ڈاس کے سراغ اور تجزیے کے لیے صارف کے نیٹ ورک کی ہمہ وقت نگرانی کی جاتی ہے۔ کسی بھی ڈی ڈاس حملے کو فوری طور پر صارف کے گوش گزار کرایا جاتا ہے۔ سروس ڈی ڈاس حملے کا تجزیہ کر کے نیٹ ورک کی حفاظت کو بھی بہتر بناتی ہے تاکہ صارفین ڈی ڈاس حملوں سے اپنے سرورز اور راؤٹرز کو محفوظ بنائیں۔ این ٹی ٹی کام اور رضا کار اداروں کی جانب سے کیے گئے تجربات نے ظاہر کیا کہ یہ سروس صارف کی ڈی ڈاس مانیٹرنگ اور تجزیے کے آپریشنز کو 75 فیصد تک کم کر سکتی ہے۔

گلوبل آئی پی نیٹ ورک سروس خود مختار سسٹمز، آئی پی ایڈریسز، پورٹس وغیرہ کی صورتوں میں بھی ٹریفک کا جائزہ لیتی ہے۔ تفصیلی رپورٹنگ گرافیکل ڈسپلے فارمیٹ میں دستیاب ہے تاکہ صارفین کو اضافی نیٹ ورک بہتری کی ضروریات کو بہتر انداز میں سمجھتے ہوئے اپنے نیٹ ورک ٹریفک کی صورتحال کو سمجھنے کا موقع ملے۔ این ٹی ٹی کام اور رضاکار اداروں کی جانب سے کیے گئے تجربات نے ظاہر کیا کہ سروس صارفین کے لیے متعلقہ ٹریفک تجزیے اور رپورٹنگ کے آپریشنز کو 90 فیصد تک کم کر سکتی ہے۔

این ٹی ٹی کام نے 7 ستمبر کو ایکوینکس ڈیٹا سینٹر میں اپنی پی او پی کو بھی اپ گریڈ کیا ہے اور 26 ستمبر کو @ٹوکیو ڈیٹا سینٹر میں نئی پی او پی کے اجراء کا منصوبہ رکھتا ہے، یہ دونوں ڈیٹا سینٹر ٹوکیو میں واقع ہیں۔ یہ دونوں تنصیبات ممکنہ طور پر صارفین کی وسیع رینج کی سہولیات کو پورا کریں گی، جن میں جاپان اور بیرون ملک دونوں کے مواد فراہم کنندگان، آئی ایس پیز اور ٹیلی کام کیریئرز شامل ہیں۔

این ٹی ٹی کام کی گلوبل آئی پی نیٹ ورک سروس ایک تیز رفتار براڈ بینڈ آئی پی کمیونی کیشن سروس ہے جو ایشیا، اوقیانوسیہ، یورپ اور ریاستہائے متحدہ امریکہ میں آپریٹ کرتی ہے۔ یہ ادارے کی عالمی سطح اول کی آئی پی بیک بون سے براہ راست منسلک ہے، جو تیز، قابل بھروسہ ڈیٹا ٹرانسمیشن کی زبردست بینڈوڈتھ رکھتی ہے، جس میں امریکہ-جاپان ٹریفک کے لیے 520 جی بی پی ایس، جاپان-ایشیا/اوقیانوسیہ کے لیے 421 جی بی پی ایس، جاپان-یورپ کے لیے 77 جی بی پی ایس اور یورپ-امریکہ کے لیے 100 جی بی پی ایس شامل ہیں۔ نیٹ ورک، جو آئی پی وی 4 اور آئی پی وی 6 دونوں کو سپورٹ کرتا ہے، حالیہ جون میں منائے گئے عالمی یوم آئی پی وی 6 کےتجربات  کے بنیادی نیٹ ورکس میں سے ایک تھا۔ این ٹی ٹی کام کی سطح اول آئی پی بیک بون ٹریفک حاصل اور آگے بڑھانے کے لیے پیئرنگ تعلقات کو استعمال کرتا ہے، اور ٹریفک کے لیے حتمی مقام کے طور پر کسی دوسری آئی ایس پی بھی بھروسہ نہیں کرتا۔

 

این ٹی ٹی کمیونی کیشنز کارپوریشن کے بارے میں

ملاحظہ کیجیے www.ntt.com/index-e.html

 

ذریعہ: این ٹی ٹی کمیونی کیشنز کارپوریشن

 

روابط صرف برائے ذرائع ابلاغ:

(محترمہ) رومی اوگاوا یا (محترمہ) لینا چینگ،

نیٹ ورک سروسز،

این ٹی ٹی کمیونی کیشنز کارپوریشن،

ٹیلی فون: +81-3-6700-9105،

ای میل: gin-marcom-gl@ntt.com