بمبئی سیفائر نے لندن کی معروف عمارت پر 3 ڈی شاندار پروجیکشن کے ذریعے تخیل کو حقیقت کا روپ دے دیا

AsiaNet 44976

لندن، 9 جون/پی آرنیوزوائر-ایشیانیٹ/

– عالمی مقابلے کے فاتح کا تصور بیٹرسی پاور اسٹیشن پر ظاہر کیا گیا

مسلسل دوسرے سال ویلیو1 کی جانب سے دنیا کی نمبر ون قرار دی جانے والی معروف شراب بمبئی سیفائر نے آج بمبئی سیفائر پروجیکٹ یور امیجی نیشن کمپٹی ٹیشن کے منصوبے کی عروج کے خیال کو حقیقت کا روپ دے دیا جو دریائے ٹیمز کے کنارے معروف عمارت بیٹرسی پاور اسٹیشن کے مقام پر ہوا۔

(تصویر: http://www.newscom.com/cgi-bin/prnh/20110609/461185-a)

(تصویر: http://www.newscom.com/cgi-bin/prnh/20110609/461185-b)

دسمبر 2010ء میں مقابلے کا آغاز کرتے ہوئے بمبئی سیفائر نے دنیا سے پوچھا تھا کہ وہ اپنی تصویر کشی اور نظموں سمیت مختلف خیالات پیش کرتے ہوئے اپنی تخیل کا اظہار کرے، جنہیں بمبئی سیفائر 3ڈی متاثر کن پروجیکشن کے لیے تحریک کے طور پر استعمال کیا جا سکے۔ برطانیہ سے آسٹریلیا تک پھیلی ایک عالمی مختصر فہرست میں سے فیس بک شائقین نے اپنے پسندیدہ کو منتخب کیا۔ خوش قسمت فاتح البانیہ سے تعلق رکھنے والی اریولا ویلیا واضح طور پر جیت گئیں جنہیں فیس بک فالوورز نے منتخب کیا۔

3ڈی متاثر کن پرجیکشن کی تحریک پیش کرنے کے لیے دنیا کے بہترین تخلیقی افراد کے ساتھ کام کرنے والے اریولا نے اپنے تخیل کو آج حقیقت کا روپ دھارتے ہوئے دیکھا کیونکہ حتمی وژن بمبئی سیفائر کی پروجیکشنز میں شامل کر دیا گیا ہے جو دریائے ٹیمز کے کنارے لندن کی معروف ترین عمارت بیٹرسی پاور اسٹیشن کو تبدیل کر دے گا۔

اریولا کے فاتح خیال نے بیٹرسی پاور اسٹیشن کو ایک طاقتور تخیل کے منظر تخلیق کرنے کے لیے ‘تقویت’ حاصل کرتے دیکھا ۔ ایک معروف عمارت بدلتے ہوئے رنگوں کی قوس قزح کی روشنیوں سے منور کی گئی جو شوخ، چوکور لکیروں کی عکاسی کر رہی ہے۔ تماشائیوں کو عمارت کے اندر ایک سرد نیلی تخیل کی دنیا دکھائی گئی، جو ٹیمز کے پانیوں میں انتہائی مرتعش طور پر منعکس ہوئی۔ موسیقی موسیقی کے لحاظ سے پروجیکشن نے حاضرین کو جکڑ لیا اور متاثر کیا۔ مکمل پروجیکشن دیکھنے کے لیے facebook.com/bombaysapphire ملاحظہ کیجیے۔

اریولا نے کہا کہ “میں یہ مقابلہ جیتنے اور اپنے خیال کو آج ایک حقیقت کے روپ میں دیکھنے پر پر بہت خوش تھی۔ میں میرے تصور سے کہیں زیادہ بہتر نظر آیا۔ “

بمبئی سیفائر گلوبل کیٹگری ڈائریکٹر جون بورک نے کہا “بمبئی سیفائر عرصہ دراز سے تہہ دل سے ایک تخیل کا حامل ہے اور اس مقابلے کے ذریعے ہم اس تخیل کو دوسروں تک پہنچانے کے قابل ہوئے، ایسا کچھ جسے ہم جاری رکھنے کے خواہاں ہیں۔”

بمبئی سیفائر نے شاندار سلور فلیٹ کے پرچم بردار پرتعیش بحری جہاز سلور اسٹرجیون سے دنیا بھر کے مہمانوں کو پروجیکشن دیکھنے کے لیے مدعو کیا۔ ٹیمز پر بہتے ہوئے اور بمبئی سیفائر کی شرابوں کے آمیزے کے گھونٹوں نے اس شاندار کام کا بہترین نظارہ فراہم کیا۔

اپنی تخلیق سے لے کر بمبئی سیفائر نے شراب سازی تک اپنی تخیلاتی رسائی رکھی ہے – جو اس کی کامیابی کے رازوں میں سے ایک ہے۔ یہ 1761ء میں ایک انگریزی شراب ساز تھامس ڈیکن کی تخلیق کردہ ترکیب پر منحصر ہے۔ ڈیکن کی ترکیب اور کشید کرنے کے پیچیدہ طریقوں نے شراب کے معیار کے نئے دور کے آغاز کا اشارہ کیا۔ فی الواقع بمبئی سیفائر 1831ء میں ڈیکن خاندان کی جانب سے خریدی گئی کارٹر ہیڈ کے استعمال کے ذریعے بنائی جاتی رہی ہے، جو ایک دست کاری مصنوعات کی تخلیق کے لیے بہترین ظرف ہے۔

بمبئی سیفائر پہلی معروف شراب ہے جو نباتیات کی اہمیت کو ظاہر کرتی ہے، جنہیں دنیا بھر کے دور دراز مقامات سے دست بدست منتخب کیا جاتا ہے۔ برانڈ کے معروف ویپر انفیوژن عمل کے ساتھ ساتھ یہ نباتات ایک للچاتے  ہوئے، ہموار اور پیچیدہ ذائقے کو تخلیق کرتے ہیں جو بمبئی سیفائر ہے۔

جب گزشتہ دسمبر میں “پروجیکٹ یور امیجی نیشن” کا اجراء کیا گیا تو بمبئی سیفائر نے فیس بک شائقین کو اپنے خیالات پیش کرنے کی دعوت دینے سے قبل اپنے تخلیق کا اظہار کر دیا تھا۔

جدید 3ڈی پروجیکشن نے لندن کے قدیم رائل نیوی کالج کو ایک نیلگوں سمندر کی مخلوقات میں تبدیل کر دیے جس کا محرک عمارت کی بحری تاریخ تھی۔ فلم دیکھنے کے لیے http://www.youtube.com/bombaysapphire ملاحظہ کیجیے۔

1  ڈیٹا انٹرنیشنل وائن اینڈ اسپرٹ ریسرچ (IWSR) کی جانب سے حاصل کیا گیا ہے جو دسمبر 2009ء تک ختم ہونے والے 12 ماہ پر مشتمل ہے

ذرائع ابلاغ، کے لیے مزید معلومات ، تصاویر اور انٹرویوز کے لیے درخواستوں کے لیے رابطہ کیجیے:

ایمی ویلز، ہل اینڈ نولٹن

+44-20-7973-4416

aimee.wells@hillandknowlton.com

کیسنڈرا اسٹوڈارٹ، ہل اینڈ نولٹن

+44-20-7973-5926

cassandra.stoddart@hillandknowlton.com

ذریعہ: بمبئی سیفائر