لیکٹوبیکیلس مشروب نے نورووائرس انفیکشن کے باعث ہونے والے شدید گیسٹرو سے ہونے والے بخار میں کمی کی تصدیق کر دی

AsiaNet 44526

ٹوکیو، 10 مئی /کیوڈو جے بی این-ایشیانیٹ/

– تیمار خانوں میں گسیٹرو کو بڑے پیمانے پر پھیلنے سے روکنا متوقع –

جونٹنڈو یونیورسٹی گریجویٹ اسکول آف میڈیسن (ناگاتا ساتورو، یاماشیرو یوئی چیرو و ہمنوا) کے لیبارٹری ڈپارٹمنٹ برائے پروبایوٹکس ریسرچ نے تیمار خانہ میں رہنے والے عمر رسیدہ افراد میں لیکٹوبیکی لس کیسی اسٹرین شیروٹا (LcS) کے حامل پروبایوٹک ابالے گئے دودھ کی خوراک پر تحقیق کی ہے اور تصدیق کی ہے کہ شدید نورووائرس گیسٹرو سے ہونے والے بخار میں کمی واقع ہوئی ہے۔

آنتوں کے انسان دوست جراثیموں کے تجزیے نے ظاہر کیا کہ ایل سی ایس ابالے گئے دودھ کا استعمال کارآمد بیکٹیریا (بفیڈوبیکٹیریا، لیکٹوبیکی لس) میں اضافے، نقصان دہ بیکٹیریا (کولیفورم گروپ) میں کمی، اور شارٹ چین فیٹی ایسڈز میں اضافہ دیکھا گیا، آنتوں کے بہتر انسان دوست جراثیم اور گیسٹرو کی بیماری میں اضافے کے حوالے سے بہتر ماحول کی رائے دی ہے۔

نورووائرس شدید متعدی گیسٹرو کا سب سے بڑا سبب ہے، جو شدت، خصوصا عمر رسیدہ افراد میں،  کبھی کبھار بڑھ جاتا ہے، جن کا کمزور مامونیاتی نظام جسم میں پانی کی کمی کے خطرے سے دوچار ہو سکتا ہے۔ حال ہی میں ایسے مقامات پر عمر رسیدہ افراد میں بڑے پیمانے پر اس انفیکشن کے شکار ہونے کے واقعات پیش آئے۔ ایسے انفیکشنز سے تحفظ ایک چیلنج ہے۔

لیکٹوبیکی لس جیسے پروبایوٹکس کے اثرات کے کے حوالے سے بہت کم مواد موجود ہے، اور ہماری معلومات کے مطابق اب تک نورووائرس پر تو کوئی رپورٹ دستیاب نہیں۔

ہماری تحقیق ظاہر کرتی ہے کہ پروبایوٹک کی خوراک متعدی گیسٹرو سے تحفظ کے موثر طریقے کے طور پر کام کر سکتی ہے جن میں کمزور مامونیاتی نظام کے حامل عمر رسیدہ افراد کی اجتماعی رہائش گاہوں پر نورو وائرس سے افرادبھی شامل ہیں۔

یہ تحقیق 27 اپریل 2011ء کو ایک سائنسی جریدے برٹش جرنل آف نیوٹریشن کے آن لائن ورژن میں شایع ہوئی تھی۔

1۔ پس منظر

نورووائرس شدید متعدی گیسٹرو کا سب سے بڑا سبب سمجھا جاتا ہے۔ نورووائرس انفیکشن انگلیوں اور اس سے آلودہ کھانوں سے منتقل ہوتا ہے،اور ایک مرتبہ آنت میں پہنچنے کے بعد قے، اسہال اور/یا پیٹ کے درد کا سبب بنتا ہے۔ صحت مند افراد میں بحالی صحت کی زیادہ وقت کے باعث یہ ہلکا ہو سکتا ہے، لیکنشیرخوار بچوں اور عمر رسیدہ افراد میں شدید ہو سکتا ہے کیونکہ وہ کمزور مامونیاتی نظام کے حامل ہوتے ہیں، حتی کہ قے یا شدید اسہال کے بعد سانس لینے کے نمونیا کے سبب موت کا سبب بھی بن سکتا ہے۔ تیمار خانوں میں جہاں کمزور مامونیاتی نظاموں کے حامل عمر رسیدہ افراد مل جل کر رہتے ہیں، متعدی بیماریوں کے خطرے کو روکنا ضروری ہے۔ انفیکشن کو مکمل طور پر کنٹرول کرنا بہت مشکل ہے اس لیے انفیکشن سے نقصان کو کم سے کم کرنا چیلنج ہے۔

ہمارے تحقیقی گروپ نے لیکٹوبیکی لس (لیکٹوبیکی لس  کیسی اسٹرین شیروٹا؛ LcS) کے استعمال کے ذریعے نورووائرس انفیکشن سے تحفظ کے اثر انگیزی پر تحقیق کی ہے، جو انفیکشن کے خلاف تحفظ باعث مشہور ہے اور مامونیاتی نظام کی تنظیم کی صلاحیت رکھتا ہے۔

2۔ تحقیق کی تفصیلات

یہ تحقیق ایک تیمار خانے میں مقیم 77 عمر رسیدہ افراد پر کی گئی (جن کی اوسط عمر 84 سال تھی)۔ تمام افراد کو دو گروپوں میں تقسیم کیا گیا: ایک استعمال کرنے والا گروپ (39 افراد) اور ایک استعمال نہ کرنے والا گروپ (38 افراد)۔ استعمال کرنے والے گروپ کو اکتوبر 2006ء سے طویل عرصے تک روزانہ ایل سی ایس ابالا ہوا دودھ (80 م ل کی ایک بوتل جو 40 ارب ایل سی ایس کی حامل تھی) روزانہ دیا گیا۔ روزانہ کے ہیلتھ ریکارڈز کی بنیاد پر دونوں گروپوں کی صحت کی صورتحال چیک کی گئی، اور اگر اسہال کا مشاہدہ کیا گیا، تو فضلے کا ایک نمونہ لیا گیا اور نورووائرس کی شناخت کرنے والی کٹ کے ذریعے اس کا تجزیہ کیا گیا۔ دسمبر 2006ء میں کئی افراد نورووائرس گیسٹرو کا اضافہ دیکھنے میں آیا۔ گو کہ دونوں گروپوں کے درمیان انفیکشن کے وقوع میں بہت زیادہ فرق نہیں تھا، تاہم 37 ڈگری سینٹی گریڈ یا اس سے زائد کے بخار کا عرصہ دودھ پینے والے گروپ میں نہ پینے والے گروپ کے مقابلے میں کم تھا۔

ایک ہی جگہ پر رہنے والے دس افراد (اوسط عمر 83 سال) کو وہی ایل سی ایس ابالا گیا دودھ دو ماہ تک روزانہ دیا گیا، اور پھر دودھ حاصل کرنے سے پہلے کی سطح کے بعد کے آنتوں کے انسان دوست جراثیم کا جائزہ لیا گیا۔ نتائج نے ظاہر کیا کہ ایل سی ایس ابالے گئے دودھ کے استعمال سے انسان دوست بفیڈوبیکٹیریا اور لیکٹو بیکی لس میں اضافہ ہوا۔ دوسری جانب نقصان دے کولیفورم بیکٹیریا میں کمی دیکھنے میں آئی اور سوڈومونس کے انکشاف کے تناسب میں بھی کمی دیکھی گئی، جو نفعی اور/یا نوسوکومیئل انفیکشنز کا سبب بن سکتاہے۔ مزید برآں ایل سی ایس ابالے گئے دودھ دودھ کے استعمال نے شارٹ چین فیٹی ایسڈز (SCFAs) کی بحیثیت مجموعی کے ارتکاز میں بھی اضافہ کیا۔

3۔ گفتگو اور مستقبل کے امکانات

یہ تحقیق ظاہر کرتی ہے کہ نورووائرس انفیکشن کے نتیجے میں ہونے والے بخار کو کم کرنے میں ایل سی ایس ابالے گئے دودھ کا استعمال موثر ہے۔  ایل سی ایس ابالے گئے دودھ کے استعمال نے بفیڈوبیکٹیریا اور لیکٹوبیکی لس میں اضافہ، کولیفورم بیکٹیریا اور سوڈومونس میں کمی اور ایس سی ایف اے (بنیادی طور پر ایسیٹک ایسڈز) کے ارتکاز میں اضافہ کیا۔ آنتوں کے ایس سی ایف ایز نے مرض کا سبب بننے والے جراثیم جیسے کولیفورم گروپ میں اضافے کو ختم کیا، پانی اور برق پاشوں کو جذب کرنے کی صلاحیت اور آنتوں کی حرکت دوری کو بہتر بنایا۔ ایل سی ایس ابالے گئے دودھ کے مستقل استعمال سے فطری خلیہ مارنے کی سرگرمی کم کرنے میں بہتری دیکھنے میں آئی ہے۔ یہی ایل سی ایس استعمال کرنے سے بخار میں کمی کا کلیدی عنصر تھی اور دودھ کے استعمال سے آنتوں کے بہتر انسان دوست جراثیم اور بہتر امیونوموڈلٹری افعال سے فرد کے دفاعی نظام میں بہتری دیکھنے میں آغی۔

اس تحقیق کے نتائج تجویز کرتے ہیں کہ ایل سی ایس کمزور مامونیاتی نظام کے حامل عمر رسیدہ افراد کے تیمار خانوں میں متعدی گیسٹرو کے خلاف تحفظ کا موثر ذریعہ بننے میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے جس میں نورووائرس انفیکشن اور نظام تنفس کے اور دیگر انفیکشن شامل ہیں۔

ذریعہ: جونٹنڈویونیورسٹی

رابطہ:

یوئی چیرو یاماشیرو

پروبایوٹکس ریسرچ لیبارٹری میں مقرر پروفیسر

جونٹنڈویونیورسٹی گریجویٹ اسکول آف میڈیسن

ٹیلی فون: +81-3-5689-0082

ای میل: yamasiro@juntendo.ac.jp