سیمنٹ کی عالمی کھپت نئی بلندیوں پر پہنچ گئی

AsiaNet 44116

لندن، 6 اپریل/پی آرنیوزوائر-ایشیایٹ/

برطانیہ میں قائم انٹرنیشنل سیمنٹ ریویو نے اپنی عالمی سیمنٹ رپورٹ کی اشاعت کا اعلان کیا ہے جو 160 سے زائد ممالک کا احاطہ کرنے والا عالمی سیمنٹ صنعت کا ایک بھرپور تفصیلی اور 400 صفحات پر مشتمل تجزیہ اور پیش بندی ہے۔

بنیادی طور یہ نئی رپورٹ ظاہر کرتی ہے کہ 2008ء میں سیمنٹ کی عالمی کھپت 2.4 فیصد کمی کے ساتھ 2830 میگاٹن ہو گئی تھی، لیکن اس کے بعد 2009ء میں بحالی کے بعد 2998 میگاٹن تک پہنچ گئی اور 2010ء میں تو یہ کھپت 3294 میگاٹن تک جا پہنچی ہے، جو گزشتہ دو سالوں میں بالترتیب 5.9 اور 9.9 فیصد سالانہ اضافہ ہے۔ 2012ء تک سیمنٹ کی عالمی کھپت ریکارڈ 3859 میگاٹن تک جا پہنچنے کی پیش بندی کی گئی ہے۔

اب چین سیمنٹ کی کھپت کے عالمی اعداد و شمار میں سب سے آگے ہے جس نے 2010ء میں 1851 میگاٹن سیمنٹ کھپائی، جو 2004ء کے مقابلے میں تقریبا دوگنی ہے، جبکہ بھارت دنیا کا دوسرا سب سے بڑا سیمنٹ صارف ہے جس نے 2010ء میں 212 میگاٹن سیمنٹ خرچ کی۔ تیسرا سب سے بڑا صارف امریکہ ہے جہاں طلب کم ہو کر 69 میگاٹن تک پہنچ چکی  ہے۔

2010ء میں سیمنٹ اور اینٹوں کی عالمی تجارت 150 میگاٹن تک نوٹ کی گئی جس میں سے بحری تجارت کا اندازہ 105 میگاٹن تھا۔ مذکورہ بین الاقوامی تجارت میں 50 میگاٹن اینٹیں شامل کی گئی ہیں۔

ترکی اس وقت دنیا میں سب سے زیادہ سیمنٹ اور اینٹیں برآمد کرنے والا ملک ہے، جس کی 2010ء میں فروخت 19 میگاٹن تھی، اور اس نے چین کو پیچھے چھوڑ دیا ہے جس کی برآمدی فروخت 17 میگاٹن ریکارڈ کی گئیں۔ تھائی لینڈ 14 میگاٹن کے ساتھ سیمنٹ اور اینٹوں کا تیسرا سب سے بڑا برآمد کنندہ ہے۔

بنگلہ دیش اس وقت سیمنٹ اور اینٹوں کا سب سے بڑا درآمد کنندہ ہے جس نے 2010ء میں 12 میگاٹن سے زائد سیمنٹ برآمد کیا جس کے بعد نائیجیریا 7 میگاٹن اور امریکہ 6 میگاٹن کی باری آتی ہے (جہاں 2006ء میں سیمنٹ کی برآمد 36 میگاٹن تھی)۔

سیمنٹ کی عالمی فروخت میں 141.2 میگاٹن اور 15,884 ملین یوروز کی آمدنی کے ساتھ لافارجے کی پہلی پوزیشن برقرار ہے جس کے بعد 136.7 میگاٹن اور 15,691 ملین یوروز آمدنی کے ساتھ ہولسم کی باری آتی ہے۔ ہائیڈلبرگ سیمنٹ تیسرے نمبر پر ہے جسے سیمکس، اتال سیمنتی اور بوزی یونی سیم پر برتری حاصل ہے۔ البتہ ہولسم کو 212 میگاٹن  کے ساتھ عالمی سیمنٹ گنجائش کے لحاظ سے لافارجے پر 11 میگاٹن کی برتری حاصل ہے۔

عالمی سیمنٹ رپورٹ میں 2012ء تک ملک-بہ-ملک سیمنٹ پیش بندیاں، بشمول کھپت، پیداوار، برآمدات و درآمدات بھی شامل ہیں۔ یہ بے مثال حوالہ جاتی کام ایک لازمی سی ڈی کے ساتھ فراہم کیا جا رہا ہے جو ایکسل فارمیٹ میں 20 سال کا شماریاتی ڈیٹا فراہم کر تی ہے، جو ملک اور جغرافیائی خطوں کے اعتبار سے مرتب کی گئی ہے۔

رپورٹ ہماری ویب سائٹ پر فوری فروخت کے لیے دستیاب ہے: http://www.cemnet.com/publications/GlobalCementReport9

ہدایت برائے مدیران: انٹرنیشنل سیمنٹ ریویو 1988ء سے سیمنٹ کی صنعت میں سی ای اوز، مینیجرز، پروڈیوسرز، تاجروں اور شپنگ کے ماہرین کے لیے تفصیلی سیمنٹ معلومات کے معروف ترین فراہم کنندہ کی حیثیت سے تسلیم کیا گیا ہے۔

رابطہ: ڈیوڈ ہرگریوز، +44(0)1306-740363

ذریعہ: انٹرنیشنل سیمنٹ ریویو