نوبل انعام یافتہ یونس کو گرامین بینک سے ہٹانے کی کوششوں پر سی جی اے پی کو گہری تشویش

AsiaNet 43626

واشنگٹن، 5 مارچ 2011ء / پی آر نیوز وائر – ایشیا نیٹ /

سی جی اے پی نے آج سی جی اے پی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ٹلمین ایہربیک اور سی جی اے پی کی مجلس کے چیئر وجے مہاجن کی جانب سے  نوبل انعام یافتہ محمد یونس کو گرامین بینک سے بطور منیجنگ ڈائریکٹر  ہٹائے جانے کی کوششوں پر درج ذیل  بیان جاری کیا ہے:

“ہمیں محمد یونس کو گرامین بینک کے بطور منیجنگ ڈائریکٹر ہٹائے جانے  کے لیے حالیہ قانونی کاروائیوں اور گزشتہ چند مہینوں میں کی جانے والی منظم کوششوں پر گہری تشویش لاحق ہے۔

گزشتہ تیس سالوں میں محمد یونس اور گرامین بینک ایک ساتھ مل کر مائیکرو کریڈٹ تحریک  اور ان  غریب افراد، جو پہلے باضابطہ اقتصادی خدمات سے باہر تھے، کے لیے پیش قدمی کے لیے ایک زبردست قوت  اور علامت بن گئے ہیں۔ پروفیسر یونس اس شعبے میں سرخیل رہے ہیں اور بینکاری سے محروم غریب خواتین کے مقصد کو آگے بڑھانے کے لیے ان کی قابل ذکر شراکت بنگلہ دیش اور بین الاقوامی برادی کی جانب سے مانی جانی چاہیے۔

کریڈٹ تک رسائی غریب گھرانوں کو چھوٹے کاروباروں میں سرمایہ کاری اور خود کو غیر محفوظ ادوار  میں دیکھنے کے لیے اہم ذریعہ ہوسکتا ہے۔ مزید وسیع طور پر اقتصادی خدمات تک رسائی غریب خاندانوں کو اپنے گھریلو مالی معاملات کو مزید موثر اور ان کے آسان استعمال  کے انتظام – ہنگامی حالات سے محفوظ رہنے،  بوقت ضرورت اسکول فیس کی ادائیگی اور  بیماری یا دوسرے وقتی  صدمات  کے ساتھ نمٹنے کی سہولت دینے کے قابل بنانے کے لیے اہم فوائد پہنچا سکتی ہیں۔

مائیکرو کریڈٹ تحریک  نے اس امر کو ثابت کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے کہ ایک پائیدار طریقے اور بڑے پیمانے پر غریب افراد کو اقتصادی خدمات کی فراہمی ممکن  ہے۔

موجودہ صورتحال نہ صرف گرامین بینک اور بنگلہ دیش میں غریب صارفین بلکہ وسیع تر مائیکرو فنانس صنعت کے لیے بھی نقصان پہنچا رہی ہے۔

دنیا میں تقریباً تین ارب افراد کو باضابطہ اقتصادی خدمات تک رسائی حاصل نہیں ہے اور  یہ ہماری ترجیح رہی ہے کہ مکمل خدمات کی فہرست تک پہلے رسائی نہ رکھنے والے کم آمدنی والے طبقات  کی مکمل رسائی یقینی بنائی جائے تاکہ وہ اسے سرمایہ کاری، اثاثہ تخلیق کرنے، آسان استعمال اور صدمات سے نمٹنے کے لیے استعمال کر سکیں۔

پروفیسر یونس کو حاصل ہونے والی وسیع تر بین الاقوامی  معاونت اب اقتصادی شمولیت کی طرف دیکھنے والے بہت سے ممالک ان کے اہم کردار کی تصدیق کرتی ہے۔ہم متعدد  ممالک میں سیاسی سطح پر ایک اضافی شعور اور ذہانت کو سمجھتے ہیں  – بشمول جی 20 – کہ سماجی اور اقتصادی ترقی کے لیے مالیاتی  شمولیت کیا کردار ادا کرسکتی ہے۔

ہمیں توقع ہے کہ ایک ایسے سمجھوتے پر پہنچا جا سکتا ہے جو کہ ملک کی سماجی اور اقتصادی ترقی میں شرکت اور آگے بڑھنے کے عمل کو جاری رکھنے کے لیے بنگلہ دیش میں مائیکرو فنانس  اور موثر طریقے سے کام کرنے کے لیے گرامین بینک کو اجازت دے گا۔

ہم عالمی مالیاتی شمولیت کے  اہم مقصد کے احساس میں مدد کے لیے اپنی کوششوں میں مصروف عمل اور سختی سے توجہ مرکوز رکھے ہوئے ہیں۔”

واشنگٹن، ڈی سی میں: جینٹ تھامس، jthomas1@cgap.org، +1-202-473-8869

http://www.cgap.org

سی جی اے پی کے بارے میں

سی جی اے پی ایک آزاد پالیسی   اور تحقیقی ادارہ ہے جو دنیا کے غریبوں  کے لیے اقتصادی وسائل کو بڑھانے کے لیے وقف ہے۔ اسے 30 سے زائد ترقیاتی ایجنسیوں اور نجی فاؤنڈیشنز کی مدد حاصل ہے جو کہ غربت کو کم کرنے کے مشترکہ  مقصد میں حصہ دار ہیں۔ ورلڈ بینک میں موجود سی جی اے پی مارکیٹ انٹیلی جنس کی فراہمی، معیار کی ترقی، جدید حل کی تخلیق اور حکومتوں، مائیکروفنانس فراہم کنندگان، چندہ دینے والے اور سرمایہ کاروں کو مشاورتی خدمات پیش کرتی ہے۔ مزید کے لیے ملاحظہ فرمائیں http://www.cgap.org۔

ذریعہ: سی جی اے پی

رابطہ: جینٹ تھامس،

jthomas1@cgap.org،

+1-202-473-8869

http://www.cgap.org