عالمی تعمیرات میں اضافہ آئندہ 10 سالوں میں عالمی جی ڈی پی کو تیز تر کرے گا

AsiaNet 43513

لندن، 3 مارچ / پی آر نیوز وائر – ایشیا نیٹ /

–        ریاستہائے متحدہ امریکا میں متدائر چکر اور ایشیائی بجلی گھروں میں اضافہ سے آئندہ 10 سالوں کے دوران دنیا کی تعمیرات میں وسیع  ترقی ہوگی۔

–        عالمی تعمیرات میں آج کے 7.2 ٹریلین ڈالر سے 2020ء تک 12 ٹریلین ڈالرتک تقریباً 70 فیصد اضافہ ہوگا۔

–        چین، ریاستہائے متحدہ امریکا اوربھارت 4.8 ٹریلین ڈالر کے نصف سے زائد اضافہ پیدا کریں گے۔

گلوبل کنسٹرکشن  پرسپکٹیو اینڈ  آکسفرڈ اکانومکس کی جانب سے آج جاری ہونے والی ایک نئی رپورٹ پیش گوئی کرتی ہے کہ عالمی تعمیرات میں  اضافہ آئندہ دہائی میں دنیا کی جی ڈی پی ترقی کو تیز تر کردے گا۔

ملٹی میڈیا خبری اعلامیہ دیکھنے کے لیے ملاحظہ فرمائیں:

http://multivu.prnewswire.com/mnr/prne/gcp/47613/

گلوبل کنسٹرکشن  پرسپکٹیو کے ڈائریکٹر گراہم روبنسن نے کہا کہ “تعمیرات میں اتنی تیز جی ڈی پی ترقی اس سے قبل نہیں دیکھی گئی، جسے چین اور بھارت کی ابھرتی ہوئی زبردست طاقتوں  اور ریاستہائے متحدہ امریکا کی تعمیرات میں  چکر سے تقویت حاصل ہوئی۔”

عالمی مشارورتی ادارے PwC کی اسپانسر کردہ تعمیرات میں ایک نمایاں عالمی تحقیق گلوبل کنسٹرکشن 2020ء رپورٹ  پیش گوئی کرتی ہے کہ 2020ء تک عالمی تعمیرات میں 67 فیصد آج کے 7.2 ٹریلین ڈالر سے 12 ٹریلین ڈالر تک کا اضافہ ہوگا۔

رپورٹ بتاتی ہے کہ عالمی سطح پر آئندہ دس سالوں کے دوران مجموعی طور پر 97.7 ٹریلین ڈالر  تعمیرات پر خرچ کیے جائیں گے۔

چین، بھارت اور ریاستہائے متحدہ امریکا میں ہونے والی ترقی 2020ء تک عالمی تعمیرات میں متوقع 4.8 ٹریلین ڈالر میں سے نصف سے زائد کا محاسبہ کرے گی۔

چین اور بھارت آبادی میں اضافے کے ساتھ ابھرتی ہوئی مارکیٹوں میں ترقی کریں گے،  تیز شہر کاری اور مستحکم اقتصادی ترقی تعمیرات کے لیے اہم ذریعے ہیں۔

محرک اخرجات سے آگے بڑھنے والا چین 2010ء میں ریاستہائے متحدہ امریکا کو پیچھے چھوڑ کر دنیا کی سب سے بڑی تعمیراتی مارکیٹ بن گیا۔

چین کی تعمیراتی مارکیٹ 2020ء میں 2.5 ٹریلین ڈالر تک دہائی کے دوران حجم میں دگنی سے بھی زائد یا دنیا کی تعمیرات کا 21 فیصد ہوجائے گی۔

آکسفرڈ اکانومکس میں اقتصادی تجزیہ کے ڈائریکٹر ڈاکٹر نیل بلیک نے کہا کہ “ریاستہائے متحدہ امریکا کے  ردعمل اور ابھرتی ہوئی مارکیٹوں کی بدولت تعمیرات اگلی دہائی کی محرک  عالمی ترقی صنعتوں میں سے ایک بن جائے گی۔”

رپورٹ پیش گوئی کرتی ہے کہ بھارت 2018ء تک دنیا کی تیسری بڑی تعمیراتی مارکیٹ بن کر جاپان پر دسترس  حاصل کرلے گا۔

ریاستہائے متحدہ امریکا نے  رہائشی اور غیر رہائشی دونوں تعمیراتی شعبوں میں مختصر مدت کے  دوہرے ہندسے اضافہ کے ساتھ تعمیرات میں ایک تیز متدائر چکر درج کیا۔

سات ممالک – چین، ریاستہائے متحدہ امریکا، بھارت، انڈونیشیا، کینیڈا، آسٹریلیا اور روس  2020ء کے لیے تعمیرات میں دو تہائی اضافہ درج کا محاسبہ کریں گے۔

PwC، انجینئرنگ اور تعمیرات کے عالمی سربراہ جوناتھن ہوک نے کہا کہ “سندیافتہ اداروں کو اس پر کام کرنے کی ضرورت ہے کہ موجودہ ترقی کے دلچسپ مواقع سے فائدہ حاصل کرنے کے لیے کس طرح صلاحیتوں کو تعینات کیا جائے اور بہترین اتحاد تخلیق کیا جائے۔”

http://www.globalconstruction2020.com

ذریعہ: گلوبل کنسڑکشن پرسپیکٹو اینڈ آکسفورڈ اکانومکس

رابطہ برائے ذرائع ابلاغ:

گراہم روبنسن – graham@constructglobal.com، +44(0)203-0868820