آر اے کے ایف ٹی زیڈ تیزی سے ترقی کی جانب گامزن 2010ء میں 3,239 نئی کمپنیاں رجسٹر

AsiaNet 43186

راس الخیمہ، متحدہ عرب امارات، 9 فروری / پی آر نیوز وائر – ایشیا نیٹ /

–        2010ء کے مشکل مرحلے کے دوران مجموعی آمدنی میں 10 فیصد اضافہ

–        2010ء میں کُل 3,239 کمپنیاں  رجسٹر، 2009ء کے مقابلہ میں 14.65 فیصد اضافے کا مظہر

مشکل اقتصادی صورتحال مقابلہ کرتے ہوئے راس الخیمہ فری ٹریڈ زون اتھارٹی (RAK FTZ) – متحدہ عرب امارات کے سب سے کفایتی اور تیزی سےترقی کرتے ہوئے آزاد تجارتی علاقوں میں سے ایک –نے 2010ء کے دوران  اپنی پورٹ فولیو اور آمدنی میں مستحکم  ترقی کے حصول کا سلسلہ جاری رکھا۔

( تصویر: http://www.newscom.com/cgi-bin/prnh/20110208/436357 )

RAK FTZ نے گزشتہ سال 1,740 نئے آزاد تجارتی علاقوں کی کمپنیوں کو رجسٹر کیاجبکہ اس کے بین الاقوامی کمپنیوں(آئی سی) کے شعبہ نے ریکارڈ 1,499 رجسٹر کیا جو 2009ء کے مقابلے میں مجموعی رجسٹریشن میں 14.65 فیصد اضافے کو ظاہر کرتا ہے۔2010ء کے دوران 3,271 کمپنیوں کی اپنے کاروباری لائسنس کی تجدید کے ساتھ لائسنس تجدید میں بھی 16.49 فیصد کا اہم اضافہ حاصل کیا جس سے آزاد تجارتی علاقوں کو وسطی ایشیا کے سب سے زیادہ پرکشش سرمایہ کاری حلقوں میں سے ایک کے طور پر حاصل شہرت کو تقویت ملی ہے۔ 2010ء کے اختتام تک RAK FTZ میں فعال طور پر سرگرم  رجسٹرڈ کمپنیوں کی تعداد 5000 سے زائد تک پہنچ گئی۔

اپنی سالانہ کارکردگی رپورٹ برائے 2010ء میں RAK FTZ نے یہ اعلان بھی کیا کہ سال بھر کے دوران اس کی مجموعی آمدنی میں 2009ء کے مقابلہ میں 10 فیصد اضافہ ہوا۔

RAK FTZ کی جانب سے گزشتہ سال راس الخیمہ میں 10 ویں ورلڈ فری زون کنونشن کی میزبانی کے دوران مقامی اور بین الاقوامی سطح پر منعقد کی گئی وسیع مارکیٹنگ مہم نے 2010ء میں راس الحیمہ کے آزاد تجارتی علاقوں میں مثبت نتائج کے حصول میں مدد کی۔ راس الخیمہ کے تمام حلقوں میں مجموعی طور پر 4,500 سے زائد نئے ادارے رجسٹر ہوئے جس نے 2010ء کے لیے جی ڈی پی اور امارات کی اقتصادی ترقی میں اضافہ کیا۔دریں اثناء پورے  RAK میں ترقیاتی منصوبے کے سلسلے بھی جاری رہے بشمول تکمیل کے قریب منیٰ العرب، الحمرہ علاقہ اور سیاحت اور صنعتی شعبوں میں نئی سرمایہ کاری جیسے اشوک لیلینڈ کی گاڑیوں کی تیاری کا کارخانہ  جو 50 ملین امریکی ڈالر کی مجموعی سرمایہ کاری کو ظاہر کرتا ہے۔

RAK FTZ کے چیف ایگزیکٹو آفیسر اسامہ العمری نے 2010ء میں RAK FTZ کی کامیابیوں پر مسرت  کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ”ہمیں بہت فخر ہے کہ اس  انتہائی مشکل اقتصادی ماحول میں ہماری حکمت عملی کتنی زیادہ کامیاب رہی ۔ہماری اوپن ڈور اقتصادی ترقی کی حکمت عملی نے دنیا بھر کے سرمایہ کاروں کے اعتماد حاصل کرنے کی سمیت میں ایک طویل سفر طے کیا جس سے ہمارے آزاد تجارتی علاقوں اور RAK میں سرمایہ کاری میں اضافہ ہوا۔بڑھتے ہوا کاروباری اعتماد نے کمپنیوں کی تعداد میں اضافہ کو ظاہر کیا جنہوں نے RAK FTZ میں اپنےکاروبار جمانے کا انتخاب کیا۔”

انہوں نے مزید کہا کہ “جس آسانی کے ساتھ یہ نئے ادارے کاروبار جمانے  اور کاروائی شروع کرنے کے قابل ہوئے اس نے ایک مثبت تاثر قائم کیا  ہے۔ خاص طور پر ہماری طرف سے انہیں پنپنے اور سہولت کے لیے دیا جانے والا ماحول جو RAK FTZ کی پہچان بن گیا ہے اسے ہمارے اکثر سرمایہ کاروں نے سراہا ہے۔ پورے سال کے دوران ہماری مارکیٹنگ ٹیم کی کوششوں نے خصوصی ہدف کی آگاہی مہم کو دنیا بھر میں ممکنہ سرمایہ کاروں تک پہنچ کو یقینی بنایا۔”

راس الخیمہ میں اپنی 10 ویں سالانہ جشن کے حصہ کے طور پر ورلڈ فری زون کنونشن کی مزبانی کے علاوہ  2010ء میں RAK FTZ کی  دیگر کامیابیوں میں ایک نئی موبائل فون ویب سائٹ (انگریزی اور عربی) کا آغاز،  RAK FTZ بزنس پارک میں بزنس سینٹر 1 پر نئی ‘مزید’ سروس ڈیسک کی نقاب کشائی اور دبئی فیسٹیول سٹی میں ایک نئے  ترقی و تخلیقی مرکز کا افتتاح شامل ہے جو اس کے موجودہ اور ممکنہ صارفین کی بڑھتی ہوئی کاروباری ضروریات کو پورا کرنے کے لیے خدمات کا وسیع سلسلہ پیش کرتا ہے۔ مزید برآں، RAK FTZ نے  تمام مارکیٹوں اور شعبوں میں سرمایہ کار برادری اور کارپوریٹ کاروباروں تک رسائی کی کوششوں میں حصہ کے طور پر اپنے بزنس پارک میں ایک نیا RAK بزنس سینٹر  مقام کی شروعات بھی کی۔

2011ء میں RAK FTZ  برازیل، روس، بھارت اور چین جیسی ابھرتی ہوئی مارکیٹوں پر مسلسل اہمیت  دینے کے ساتھ اپنی رسائی کو وسعت دینے پر توجہ مرکوز رکھے گا اور 2010ء میں حاصل کردہ توسیع  کی سطح کو برقرار رکھنے کے لیے ایس ایم ایز اور کاروباروں تک اپنے  قائدانہ انداز اور توجہ سے کام کرے گا۔آزاد تجارتی علاقوں میں اپنی کارپوریٹ سماجی ذمہ داری کے اقدامات بھی انجام دے گا اور متحدہ عرب امارات کے مزید شہریوں کو اپنی افرادی قوت میں شامل کر کے اپنے اماراتی  پروگرام پر کام جاری  رکھے گا۔2011ء میں اہم منصوبوں کی ترتیب میں سے ایک بزنس سینٹر 4 کی عمارت میں خواتین کے مخصوص نئی جگہ  کا افتتاح ہے۔

العمری نے کہا کہ “راس الخیمہ کی حکومت خصوصاً سپریم کونسل کے رکن اور راس الخیمہ کے فرماں روا عزت ماآب شیخ سعود بن صقر القاسمی، اور RAK FTZ کے چیئرمین عزت ماآب شیخ فیصل بن سقر القاسمی کی جانب سے ملنے والی لامحدود حمایت امارات کے راس الخیمہ کی بطور ایک اہم بین الاقوامی سرمایہ کاری مرکز  بنانے کی ہماری کامیاب حیثیت میں ایک اہم پہلو ہے۔”

راس الخیمہ فری ٹریڈ زون اتھارٹی کے بارے میں:

راس الخیمہ فری ٹریڈ زون (RAK FTZ) متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں تیزی سے ابھرتے ہوئے اور سب سے کفایتی آزاد تجارتی علاقوں میں سے ایک ہے۔قابل خرید، لچک  اور وسیع جغرافیائی رسائی کے لیے شہرت رکھنے کے ساتھ RAK FTZ خطہ میں ترجیحی کاروباری مرکز کے طور پر تیزی سے سامنے آرہا ہے جس سے سرمایہ کار باآسانی ابھرتی ہوئی مارکیٹوں تک شاخ اور رسائی حاصل کرسکتے ہیں۔

2010ء  نے RAK FTZ کی کاروائیوں کا 10واں سال رہا،  گزشتہ دہائی میں یہ مضبوط سے مضبوط ترہوا اور اس سفر میں اعزازات و انعامات حاصل کیے۔ 2000ء میں مٹھی بھر ملازمین اور چند دفاتر کے ساتھ اپنے قیام کے بعد سے  آزاد تجارتی علاقوں نے تیزی سے ترقی کی اور اب دنیا بھر کے 106 ممالک  کے تقریباً 5,000 سے زائد متحرک کمپنیوں  کا ٹھکانا ہے، 350  سے زائد کل وقتی ملازمین کا حامل،  متحدہ عرب امارات میں چار مقامات پر  کاروبار و ترقی  کے مراکز چلا رہا ہے اور جرمنی، ترکی، بھارت اور ریاستہائے متحدہ امریکا میں رابطہ دفاتر کے ساتھ بین الاقوامی موجودگی کو وسعت دے رہا ہے۔

RAK فری ٹریڈ زون کے بارے میں مزید جاننے کے لیے ملاحظہ فرمائیں: http://www.rakftz.com

مزید معلومات کے لیے رابطہ کریں:

کلیو الیزار

تعلقات عامہ و ذرائع ابلاغ افسر

راس الخیمہ فری ٹریڈ زون اتھارٹی (RAK FTZA)

فون: +971-7-2077173

ای-میل: c.eleazar@rakftz.com

ذریعہ: RAK فری ٹریڈ زون