بنگلہ دیش کے لیے 60 میگاواٹ – ایم ڈبلیو ایم نے مان ہائم کے لیے بڑا آرڈر حاصل کر لیا

مان ہائم، 15 جنوری/پی آرنیوزوائر-ایشیانیٹ/

ایک بڑے آرڈر کے تناظر میں، مان ہائم میں قائم ایم ڈبلیو ایم نے کم از کم 15 گیس جینسٹ بنگلہ دیش کو فراہم کر دیے جن میں سے ہر ایک 4 ایم ویل کی صلاحیت کا حامل ہے۔ یہ منصوبہ جس کی ادارے کی تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی، گزشتہ سال موسم بہار میں شروع ہوا اور اب اسے اس کے مقام پر نصب کیا جا رہا ہے۔ بنگلہ دیش میں کمپنیوں کے ایک مشہور گروپ کا خاص طور پر تیار کردہ ماتحت ادارہ پریسیشن انرجی لمیٹڈ کا پاور پلانٹ اس کا خریدار ہے۔

کارل بینز کی بھرپور روایتوں کی حامل کمپنی ایم ڈبلیو ایم ڈی سینٹرلائزڈ انرجی جنریشن پلانٹس کی دنیا کی معروف کمپنیوں میں سے ایک ہے۔ ٹی سی جی 2016، 2020 اور 2032 انجنز، جو 300 سے 4300 کے ویل تک کے نتائج فراہم کر سکتے ہیں، ادارے کے ذاتی ماتحت ادارے ایم ڈبلیو ایم ایشیا پیسفک لمیٹڈ، سنگاپور کی جانب سے ایشیا میں مارکیٹ کیے گئے ہیں۔  دیگر خوبیوں کے علاوہ اس مقام کی دیگر امتیازی خصوصیات ادارے کے لیے ممکن بناتی ہے کہ وہ پورے ایشیا/پیسفک خطے میں فاضل پرزہ جات کی وسیع اور تیز تر فراہمی کے ساتھ مسابقتی اور فوری خدمات فراہم کرسکتا ہے۔

15 بڑے گیس جینسیٹس کے ساتھ اشوگانگ، بنگلہ دیش میں واقع قدرتی گیس سے چلنے والا پلانٹ 60 ایم ویل پیدا کرے گا جو تمام کی تمام عوامی گرڈ کو فراہم کی جائے گی۔ 150 ملین کی آبادی کا حامل بنگلہ دیش دنیا کے گنجان آباد ترین ممالک میں سے ایک ہے۔ اس لیے ملک کی بجلی کی روزانہ کی مانگ 5200 میگاواٹ تک پہنچ چکی ہے، جبکہ حقیقتا 4000 میگاواٹ سے زیادہ بجلی پیدا نہیں ہوتی۔ ملکی ترقی میں ممکنہ رکاوٹ کو روکنے کے لیے  2020ء تک بجلی کی صنعت میں 15 ارب امریکی ڈالرز کی سرمایہ کاری ضروری ہے۔

ایم ڈبلیو ایم ایشیا پیسفک کے صدر اور سی ای او رپریخت لاترمان نے تفصیلات پیش کرتے ہوئے کہا کہ “یہ منصوبہ بنگلہ دیش میں بجلی کی پیداوار کی دیکھ بھال اور اس میں اضافے کے لیے درکار سرمایہ کاری کے فروغ میں اپنا حصہ بھی ڈالے گا۔” اس آرڈر کا حصول ایم ڈبلیو ایم کی ترقی کی حکمت عملی کا ثبوت ہے، جو گزشتہ دو سالوں میں  جرات مندانہ مارکیٹنگ کے ذریعے قدرتی گیس، حیاتی گیس اور ڈیزل کے عملی شعبہ جات میں متعدد منصوبوں کی تکمیل کا نتیجہ ہے۔ حال ہی میں ادارے نے کوریا میں دفتر کھولا ہے۔

بنگلہ دیش پہنچنے والے 15 گیس جینسیٹس نے کل 16 ہزار کلومیٹر (10 ہزار میل) کا فاصلہ طے کیا۔ اس بھاری سامان کو چٹاگانگ کی بندرگاہ سے مقام تک پہنچانے کے لیے 40 لو-بیڈ ٹریلرز کی ضرورت پڑی۔

یہ منصوبہ کالٹی میکس انرجی پرائیوٹ لمیٹڈ، ڈھاکہ بنگلہ دیش کے ساتھ شروع کیا گیا، جو ایم ڈبلیم ایو کے ساتھ پہلے ہی کئی مشہور مقامی منصوبے کامیابی سے مکمل کر چکا ہےاور حالیہ چند سالوں میں موثر سیلز اور کسٹمر سروس آرگنائزیشن قائم کر چکا ہے۔ مان ہائم، جرمنی میں واقع ایم ڈبلیو ایم صدر دفاتر کے مطابق اشوگانگ میں نئے پاور پلانٹ کا کمرشل آغاز 2010ء کی پہلی ششماہی میں ہوگا۔

طویل عرصے سے قائم مان ہائم، جرمنی میں واقع ادارہ ایم ڈبلیو ایم گیس اور ڈیزل انجنوں کے ساتھ غیر مرکزی بجلی کی فراہمی کے  انتہائی موثر اور ماحول دوست پلانٹس  فراہم کرنے والے دنیا کے معروف ترین اداروں میں سے ایک ہے۔ ادارہ کسی بھی مقام پر اور کسی بھی وقت بجلی، گرم و سرد رکھنے والے آلات کی قابل بھروسہ اور بلا وقفہ فراہمی سے وابستہ ہے۔

مصنف: فرانک فیورمان، رکن ڈی پی وی (جرمن پریس ایسوسی ایشن)

رابطہ:

ایم ڈبلیو ایم جی ایم بی ایچ

کارل-بینز-اسٹراس 1، D-68167 مان ہائم، جرمنی

فرانک فیورمان، ابلاغ

ٹ +49-621-384-86-33

ف +49-621-384-87-47

rank.fuhrmann@mwm.net

http://www.mwm.net

ذریعہ: ایم ڈبلیو ایم جی ایم بی ایچ