ٹیکنالوجی میں ہونے والی پیشرفت کو مہمیز عطا کرنے کے لیے آئی بی ایم کی جانب سے ویت نام انوویشن سینٹر کا قیام

 

ہو چی منہ، 22 مئی/پی آر نیوزوائر-ایشیانیٹ/

نئے جامعاتی تعاون اور ڈیولپر ریسورسز مقامی تکنیکی اور کاروباری صلاحیتوں کے فروغ کو تیز کریں گے

آئی بی ایم (این وائی ایس ای: IBM) نے ابھرتے ہوئے ممالک تک اپنی رسائی کو مزید پھیلاتے ہوئے آج ویت نام میں پہلے آئی بی ایم انوویشن سینٹر (IBM Innovation Center) کا آغاز کر دیا ہے۔ نئے مرکز کا مقصد بینکاری، ٹیلی مواصلات، توانائی اور حکومتی صنعت کے شعبے میں ڈیجیٹل انفرااسٹرکچر کے منصوبوں کی طلب کو پورا کرنے کے لیے مہارت اور نئی ٹیکنالوجی کی تیاری میں مقامی آبادی کی مدد کرنا ہے۔

(لوگو: http://www.newscom.com/cgi-bin/prnh/20090416/IBMLOGO)

ہو چی منہ میں واقع یہ مرکز ویت نام، کمبوڈیا اور لاؤس میں اداروں کے مالکان، کاروباری شراکت داروں منصوبوں کے سرمایہ کاروں اور تعلیمی ادارں کو جدید ٹیکنالوجی مارکیٹ میں لانے کے لیے ورکشاپس، مشاورتی خدمات، ایک وسیع تکنیکی بنیادی ڈھانچے اور عملی مدد کے ذریعے معاونت فراہم کرے گا۔

یہ مرکز ویت نام میں بڑھتی ہوئی ٹیکنیکل کمیونٹی کو ترقی و تعمیر اور فروغ میں مدد کے لیے آئی بی ایم کی کوششوں کا حصہ ہے اور اس نے معروف جامعات کے ساتھ وسیع تر اشتراک اور بغیر کسی قیمت کے ڈیولپر وسائل تک زیادہ بہتر رسائی کا اعلان بھی کیا ہے:

         ہو چی منہ  کی یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی، ویت نام نیشنل یونیورسٹی (VNU) آئی بی ایم کے اکیڈمک انیشی ایٹو میں شمولیت اختیار کرے گی اور نئے یونیورسٹی کلاؤڈ کمپیوٹنگ سینٹر اور ایک کلاؤڈ کریکیولم کے قیام کے لیے آئی بی ایم سے تعاون کرے گی

         ہنوئی میں واقع کالج آف ٹیکنالوجی ویت نام نیشنل یونیورسٹی (VNU) ایک سروس سائنس مینجمنٹ اینڈ انجینئرنگ (SSME) ڈپارٹمنٹ قائم کرے گا اور آئی بی ایم کے ساتھ مل کر نصابِ تعلیم ترتیب دے گا؛ اور،

         آئی بی ایم developerWorks کا  ویت نامی زبان میں پہلا ورژن بھی جاری کرے کا، جو اپنی تکنیکی مہارت میں اضافہ کے خواہشمند آئی ٹی ماہرین کے لیے سب سے بڑی اور سب سے زیادہ دیکھی جانے والی سائٹ ہے۔

آج کی یہ خبر دراصل ویت نام میں آئی ٹی کی بڑھتی ہوئی ترقی کا مثبت ردعمل ہے۔ ویت نام میں انٹرنیٹ کے استعمال میں مستقل اضافے کے باعث ملک کا آئی ٹی سیکٹر 20 فیصد سالانہ کی شرح سے بڑھ رہا ہے۔ ویت نام انٹرنیٹ نیٹ ورک انفارمیشن سینٹر کے مطابق ویت نام میں انٹرنیٹ استعمال کرنے والے صارفین کی تعداد، جو 2000 میں 2 لاکھ شہریوں تک محدود تھی، 2005ء سے 2008ء کے درمیان دوگنی ہو گئی اور آج 20 ملین سے زائد ویت نامی انٹرنیٹ تک رسائی رکھتے ہیں۔

ترقی پذیر ممالک میں ویت نام میں انٹرنیٹ  کے نفوذ کا تناسب سب سے زیادہ ہے، 2020ء تک ایک مکمل صنعتی ملک بن جانے کاہدف رکھنے کے باعث ویت نام بھر میں انٹرنیٹ تک بڑے پیمانے پر رسائی نئے کاروباروں کی تخلیق میں اضافے کا باعث بنے گی جو مکمل ہوتی صنعتوں میں جدت طرازی کا محرّک ہوگی۔

ان مواقع سے بھرپور فائدہ اٹھانے کے لیے ویت نام آئی بی ایم انوویشن سینٹر صارفین کی سافٹ ویئر ٹیکنالوجیز کو مارکیٹ میں پیش کرنے سے قبل تجرباتی و توثیقی مراحل سے گزارنے کے لیے تکنیکی ماہرین اور مرضی کی عملی سپورٹ فراہم کرے گا۔ مرکز اوپن اسٹینڈرڈز-بیسڈ اور کلاؤڈ کمپیوٹنگ، ویب 2.0 ٹیکنالوجیز، سروس اورینٹڈ آرکیٹکچر (SOA)، سروس مینجمنٹ اور توانائی اور ماحولیاتی فوائد کے ساتھ کمپیوٹنگ ڈیزائن جیسی ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجیز کے لیے تربیت و رسائی فراہم کرے گا۔

آئی بی ایس آئی ایس وی اور ڈیولپرز ریلیشنز کے جنرل مینیجر جم کورگل کہتے ہیں “آئی بی ایم مسلسل دنیا بھر میں ابھرتی ہوئی مارکیٹوں میں بڑی سرمایہ کاری کر رہا ہے اور جدید آئی ٹی مہارتوں اور جدت کو فروغ دیتے ہوئے مقامی ایکوسسٹمز کی ترویج میں مدد کے ساتھ کاروبار میں توسیع کر رہا ہے۔آئی بی ایم انوویشن سینٹر اور جامعات کے ساتھ اس اشتراک کے نتیجےہم آئی بی ایم کے تکنیکی وسائل اور مہارت کو جدت طرازی کو مزید مہمیز دینے کے لیے زیادہ قابل رسائی بنا سکتے ہیں اور مقامی کاروباری اور تعلیمی اداروں کو عالمی سطح پر مدد کر سکتے ہیں۔”

ویت نام مرکز دنیا بھر میں آئی بی ایم کے 43 انوویشن سینٹرز میں تازہ اضافہ ہے، جو ایک لاکھ کاروباری شراکت داروں کی کامیابیوں میں ادارے کی ایک ارب ڈالر سالانہ سرمایہ کاری کا حصہ ہے۔

2008ء میں آئی بی ایم انوویشن سینٹرز نے ورکشاپس، سیمینارز اور کنسلٹیشنز کے ذریعے 22 ہزار سے زائد کاروباری شراکت داروں کی مدد کی تاکہ ان کی مہارتوں میں اضافہ اور آئی بی ایم ٹیکنالوجیز پر ان کے حل ترتیب دیے جا سکیں، جو 7 ہزار سے زائد ٹیکنالوجی  اختیارات (enablements)کو ممکن بنایا۔

اِس سال آئی بی ایم انوویشن سینٹرز بغیر کسی قیمت کے آئی بی ایم بزنس پارٹنر ڈیولپمنٹ سیریز انٹرایکٹو سیمینارز منعقد کریں گے تاکہ متحرک بنیادی ڈھانچوں میں کلاؤڈ کمپیوٹنگ اور توانائی کی بچت جیسے مختلف شعبوں میں آئی بی ایم کی جدید ٹیکنالوجی پر گہری نظر فراہم کی جاسکے، اور ساتھ ساتھ اس امر کو یقینی بنایا جا سکے کہ شراکت دار کس طرح آئی بی ایم کے موجودہ دستیاب وسائل کو زیادہ تیزی سے مارکیٹ تک پہنچانے، تعمیر کے اخراجات میں کمی اور فروخت کے چکروں کو کم کرنے کا فائدہ اٹھانے کے ذریعے آئی بی ایم کے ساتھ اپنے تعلقات کو بڑھا سکتے ہیں۔

ہو چی منہ شہر میں یونی کوم (UNICOM) سافٹ ویئر کے صدر اور سی ای او الیگزینڈر گریگورُک نے کہا کہ “ایک آئی بی ایم شراکت دار کی حیثیت سے ہمارے ادارے نے کوالالمپور، ملائیشیا میں واقع آئی بی ایم انوویشن سینٹر سے مفت عمیق تکنیکی و مشاورتی خدمات حاصل کیں۔ مرکزہمیں اعلیٰ کارکردگی کی برتری، پورٹنگ اور ٹیسٹنگ کے اخراجات میں کمی اور مارکیٹ میں ہمارے بینکاری کے سافٹ ویئر  کی جلد از جلد دستیابی کی سہولت دی ہے۔ نیا ویت نام آئی بی ایم انوویشن سینٹر کاروباری اداروں کو خطے میں نئے کاروباروں کو متحرک کرنے اور جدت طرازی کے لیے درکار ٹیکنالوجی اور مہارت تک رسائی فراہم کرنے میں مدد کے لیے ایک شاندار مقامی وسیلہ فراہم کرے گا۔”

ویت نامی مارکیٹ سے آئی بی ایم کی وابستگی میں مزاحمت اضافہ کرتے ہوئے آئی بی ایم انوویشن سینٹر ایک مقامی ٹیکنالوجی مرکز کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دے گا، جو مقامی آئی بی ایم شراکت داروں کو آئی بی ایم ویت نام کی کلاؤڈ لیب، بینکنگ سینٹر آف ایکسی لینس اور ٹیکنیکل ایکسپلوریشن سینٹر سے باہم منسلک کرے گا۔

آئی بی ایم ویت نام کے کنٹری جنرل مینیجر وو ٹان لونگ نے کہا کہ “ایک ابھرتی ہوئی قوم کی حیثیت سے ویت نام مقامی اداروں، نو آموزوں، تعلیمی اداروں اور آئی ٹی ماہرین  کے لیے وسیع مواقع پیش کرتا ہے۔ آئی بی ایم آئی ٹی مہارت کے گرد تحریک کو نمو بخشنے اور جدت طرازی کے لیے 2000ء سے اب تک ویت نام جیسے ابھرتی ہوئی ممالک میں درجن بھر آئی بی ایم انوویشن سینٹرز قائم کر چکا ہے۔ یہ ملک صلاحیت کی دولت سے مالا مال ہے اور آئی بی ایم مقامی تکنیکی برادری کی ترویج سے وابستہ ہے۔”

نئے اکیڈمک تعلقات اور سافٹ ویئر ڈیولپرز ریسورسز

آج کے اعلان میں آئی بی ایم اور دی کالج آف ٹیکنالوجی، وی این یو، ہنوئی اور یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی، وی این یو، ہو چی منہ شہر کے ساتھ دو علیحدہ علیحدہ معاہدے شامل ہیں تاکہ مستقبل میں روزگار کے مواقعوں کے لیے ٹیکنالوجی اور کاروباری مہارت کی ضرورت پیدا کرنے کے لیے نئی تحقیق اور نصابِ تعلیم ترتیب دیا جاسکے۔

یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی، وی این یو، ہو چی منہ شہر اور آئی بی ایم ایک کلاؤڈ کمپیوٹنگ لیب تعمیر کریں گے جو جامعہ کو مختلف جدید ترین کلاؤڈ کمپیوٹنگ کنفیگوریشنز کوتجرباتی، ارتقائی اور توسیع کے مراحل سے گزارنے کی سہولت دے گی۔ یہ جامعہ کوعالمی معیار کی تحقیقی سرگرمیوں میں شمولیت میں مدد دے گی اورخطے میں معروف صنعتی اداروں کے ساتھ تعاون کی سہولت دے گی۔ 

مشترکہ کوشش میں آئی بی ایم ہارڈ ویئر اور سافٹ ویئر پر تحقیق اور کلاؤڈ کمپیوٹنگ ٹیکنالوجی سے متعلق تعلیمی پروگرامز اور نصابِ تعلیم کی تخلیق شامل ہیں۔ جامعہ آئی بی ایم اکیڈمک انیشی ایٹو میں بھی شمولیت اختیار کرے گی جو 21 ویں صدی کی مہارت کو مہمیز عطا کرنے والے پروگرامز کی تخلیق کے لیے کلیہ جات اور طلباء کو بغیر کسی قیمت کے مفت وسائل فراہم کریں گے۔

ہنوئی میں واقع دی کالج آف ٹیکنالوجی، وی این یو اور آئی بی ایم مشترکہ طور پر نیا نصابِ تعلیم اور تحقیق تیار کریں گے جس میں بنیادی توجہ SSME پر دی جائے گی جو کمپیوٹر سائنس، انجینئرنگ اور بزنس اسٹریٹجی کو ایک شعبے کے تحت یکجا کرتی ہے۔ کالج ایک SSME ڈپارٹمنٹ بھی قائم کرے گا جس کی بنیادی توجہ نئے تعلیمی شعبہ جات پر مرکوز ہوگی جو کاروباری و ٹیکنالوجی دونوں پر مشترکہ مہارت کے حامل طلباء سامنے لائے گا جو ملک کی اقتصادی ترقی اور جدت دونوں کے لیے فوری طور پر اپنا حصہ ڈالنے کے لیے آج کی افرادی قوت میں شمولیت کے لیے ضروری ہیں۔

آئی بی ایم ویت نام قوم کو جدید خطوط پر استوار رکھنے کی کوششوں کی بھرپور طلب کو پورا کرنے کے لیے انتہائی باصلاحیت و ماہر پیشہ ور افراد کی تیاری کے لیے 20 سے زائد تعلیمی اداروں کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے۔

آئی بی ایم نے آج developerWorks کے ویت نامی زبان کے وسائل کا بھی اعلان کیا ہے تاکہ ویت نام کے آئی ٹی ماہرین کو سافٹ ویئر ٹولز اور کوڈ، آئی ٹی معیارات اور بہترین عمل، اور ماہرانہ تربیت کے لیے اعلیٰ ترین دسترس حاصل ہو سکے۔ یہ وسائل یہاں حاصل کیے جا سکتے ہیں:

www.ibm.com/developerworks/vn

ٹیکنالوجی مہارت کے حوالے سے سب سے بڑی اور سب سے زیادہ دیکھی جانے والی عالمی سائٹ کی حیثیت سے developerWorksدنیا بھر میں لاکھوں ڈیولپرز استعمال کرتے ہیں اور جدید ترین اوپن معیارات اور ابھرتی ہوئی ٹیکنالوجیز کے استعمال میں مدد دیتا ہے جبکہ اس امر کو بھی یقینی بناتا ہے کہ آئی ٹی کمپنیوں کو ٹیکنالوجی سرمایہ کاری میں مدد کے لیے درکار اوزار اور صلاحیتیں دستیاب ہوں جیسے جاوا، لینکس، ایکس ایم ایل اور کلاؤڈ کمپیوٹنگ۔

آئی بی ایم ویت نام کے حوالے سے مزید معلومات کے لیے ملاحظہ کیجیے: www.ibm.com/vn۔

آئی بی ایم انوویشن سینٹرز کے بارے میں مزید معلومات کے لیے ملاحظہ کیجیے: www.ibm.com/partnerworld/iic۔

ویت نام میں آئی بی ایم انوویشن سینٹر کے بارے میں مزید معلومات کے لیے ملاحظہ کیجیے: www.ibm.com/partnerworld/iic/vietnam.html

 

Nguyen Phuong Linh

IBM Vietnam Media Relations

+84-43-946-2164

linhnp@vn.ibm.com

 

Lon Levitan

IBM Media Relations

+1-512-286-7216

llevitan@us.ibm.com

 

ذریعہ: IBM

رابطہ: Nguyen Phuong Linh

IBM Vietnam Media Relations

+84-43-946-2164

linhnp@vn.ibm.comیا

 

 Lon Levitan

IBM Media Relations

+1-512-286-7216

llevitan@us.ibm.com

لوگو: http://www.newscom.com/cgi-bin/prnh/20090416/IBMLOGO

(IBM)