بینک آف امریکہ نے پہلی سہ ماہی میں 4.2 ارب ڈالر آمدنی حاصل کی

 

چارلوٹ، شمالی کیرولائنا، 20 اپریل/ پی آر نیوز وائر – ایشیا نیٹ/                   

2008ء کی تمام آمدنی سے بھی زیادہ

36 ارب ڈالرز کی ریکارڈ آمدنی اور 19 ارب ڈالرز کی قبل از ٹیکس، پری-پروویژن آمدنی

خالص آمدنی میں میرل لنچ کا 3 ارب ڈالرز سے زائد کا حصہ

حقیقی عمومی ایکوئٹی تناسب 3.13 فیصد تک بہتر ہوگیا

پہلی سہ ماہی میں کریڈٹ میں 183 ارب ڈالرز تک اضافہ

لون لوس ریزرو میں 6.4 ارب ڈالرز کا اضافہ

 

بینک آف امریکا کارپوریشن نے آج 2009ءکی پہلی سہ ماہی کیلئے4.2بلین ڈالر کا خالص منافع رپورٹ کیاہے۔ترجیحی منافع کی ادائیگی کے بعد، جس میں امریکی حکومت کو اداکئے جانے والے402ملین ڈالر شامل ہیں ، رقیق شدہ آمدنی 0.44ڈالرفی حصص ہے۔

(لوگو: http://www.newscom.com/cgi-bin/prnh/20050720/CLW086LOGO-b)

اس سہ ماہی کے نتائج میں میرل لنچ اینڈ کمپنی (Merrill Lynch & Co)، جسے بینک آف امریکا نے یکم جنوری2009ءکو خریدا تھا اور کنٹری وائیڈ فنانشل (Countrywide Financial) جویکم جولائی 2008ءکو حاصل کی گئی تھی،شامل ہیں ۔میرل لنچ اینڈ کمپنی نے خالص آمدنی میں 3.7بلین ڈالر کاحصہ ڈالا،جس میں مضبوط کیپیٹل مارکیٹ ریونیو کے مخصوص انضمامی اخراجات شامل نہیں ہیں ۔ کنٹری وائيڈ نے بھی رہن قرضہ جات اوردوبارہ سرمایہ کاری کے حجم میں اضافے کے طورپرخالص آمدنی میں حصہ ڈالاہے۔پچھلے سال کے نتائج میں میرل لنچ اینڈ کمپنی اور کنٹری وائیڈ فنانشل شامل نہیں تھے۔

 سہ ماہی کے دوران کمپنی نے اپنے سرمایہ اور سیال اثاثوں میں اضافے کیلئے کئی اقدامات اٹھائے ہیں ،جس میں قرضوں کے خسارے کے محفوظ اثاثہ جات اور کیش پوزیشن کو تیار کرنا شامل ہیں ۔

چیئرمین اور چیف ایگزیکیوٹیو آفیسرکینتھ ڈی لیوس کے مطابق”یہ حقیقت کہ ہم اس سہ ماہی کے دوران مستحکم اور مثبت خالص  آمدنی کے قابل ہوئے ، اس ماحول میں حد درجہ قابل تحسین خبر ہے”۔ “یہ ہمارے متنوع کاروباری ماڈل اورعمل کرنے کی اجتماعی صلاحیت کااظہار ہے۔ہم خصوصی طورپر مسرور ہیں کہ ہمارے ملک گیر سطح پر نئے ساتھی اور میرل لنچ نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے،جو ہماری اس بے مثال کامیابی کا حصہ ہے”۔

لیوس نے کہا کہ”بہر حال ہم یہ سمجھتے ہیں کہ ہمیں انتہائی مشکل چیلنجز کا مسلسل سامنا کرتے رہنا ہے ، جوبنیادی طورپر جمع پونجی میں آنے والی کمی کے باعث ہے، جس کا سبب معاشی کمزوریاں اور بڑھتی ہوئی بے روزگاری ہے”۔”ہماری کمپنی اپنے صنعتی راہنماء اقدامات سے امریکی معیشت کو مزید تقویت دینے کے عمل میں اپنا حصہ ڈالتی رہے گی،جن میں رہن قرضہ جات میں اصلاحات ،جہاں ضروری ہوگھریلو قرضہ جات کی تشکیل نو اورجہاں ممکن ہو بندشوں میں تخفیف کرنا شامل ہیں ۔ ہم اپنے اس کردار کو جاری رکھنے کے بارے میں غور کررہے ہیں “۔

2009ءکی پہلی سہ ماہی کی کاروباری جھلکیاں :

        بینک آف امریکامیرل لنچ اس سہ ماہی کے دوران عالمی اور امریکی سرمایہ کاری بینکنگ میں دوسرے نمبر پر رہی،جبکہ حجم کے لحاظ سے امریکا میں سرمایہ کی حصصی مالیت کے اعتبار سے پہلے نمبر پر تھی۔امریکا کے قرضہ دینے اور حصصی اور مشترکہ قرضہ جات مہیا کرنے میں پہلے نمبر پر رہی اورپہلی سہ ماہی کے جدول کے مطابق ان پانچ اعلیٰ ترین مشاورتی کمپنیوں میں شامل ہے، جو کمپنیوں کے انضمام،عالمگیر حصول پرمشاورت مہیا کرتی ہیں ۔

        بینک آف امریکا نے پہلے رہن کیلئے 85بلین ڈالر کافنڈ مہیا کیا،جس میں 382,000افراد کویاتو مکان خریدنے کیلئے یااپنے جاری رہن پر دوباری سرمایہ کاری کیلئے مدد فراہم کی۔تقریباً 25فیصد رقم خریداری کیلئے مہیا کی گئی۔

        اس سہ ماہی کے دوران جمع پونجی میں اضافہ ، بشمول44.3بلین ڈالر کی تجارتی تجدید،جوچوتھی سہ ماہی کے 180.8بلین ڈالر کے مقابلے میں اس مرتبہ183.1بلین ڈالر رہی۔نئی جمع پونجی جو85.2بلین ڈالر رہن میں 70.9بلین ڈالرغیر رئیل اسٹیٹ کاروبارمیں ،11.2بلین ڈالرکاکمرشل رئیل اسٹیٹ میں ،5.5بلین ڈالرگھریلواور چھوٹے کاروباری کارڈوں پر ،4.0بلین ڈالرگھریلو تصرف کی اشیاءکی کریداری کیلئے اور6.3بلین ڈالردیگر اشیاءصرف کیلئے دئیے گئے۔ اس میں کاروباری اضافے شامل نہیں ہیں ، چوتھی سہ ماہی کے دوران کریڈٹ 115بلین ڈالرتھا،اس کے مقابلے میں اس سہ ماہی کے دوران138.8بلین ڈالرکریڈٹ دیاگیا۔

        پہلی سہ ماہی کے دوران 45,000نئے گاہکوں کو نئے کریڈٹ کارڈ اور چھوٹے کاروبار کیلئے قرضہ کی مد میں 720 ملین ڈالر اداکئے گئے۔

        کمپنی نے 16بلین ڈالر 102,000کم اور اوسط آمدنی والے افراد کو رہن کے بدلے دئیے۔

        دوبارہ سرمایہ کاری اور پہلے رہن کی درخواستوں کے حجم کی ضروریات سے نمٹنے کیلئے کمپنی 5,000ہزارپوزیشن کوشامل کرنے کے عمل میں ہے۔ساتھ ہی 6,400 سے زائد ایسوسی ایٹس قرضہ میں ترامیم کیلئے صارفین کی بڑھتی ہوئی ضروریات کی مدد کیلئے موجود ہیں ۔

        مالک مکانوں کوبندش سے بچانے میں مدد دینے کیلئے ،بینک آف امریکا نے اس سہ ماہی کے دوران 119,000 گھر وں کے قرضہ جات میں ترامیم کی ہیں ۔گذشتہ سال کمپنی نے قرضوں کے نظام میں ترامیم وتبدل کاکام شروع کیا اور 100بلین ڈالر کے قرضوں کو سہل بنایاتاکہ6لاکھ30ہزارقرض خواہ اپنے مکانوں کی ملکیت برقرار رکھ سکیں ۔اس پروگرام کامرکزی نکتہ یہ ہے کہ قرضوں کے نظام میں ترامیم کے طریقہ کار میں پیش قدمی کرتے ہوئے،ان مستحق قرض خواہوں کو ریلیف مہیا کی جائے،جو واجبات کی عدم ادائیگی کا شکار ہیں یا ہونے والے ہیں ۔ان لوگوں کی اقساط یاادائیگی کو دوبارہ متعین کیا گیا۔کچھ مثالوں میں نیا طریقہ کار وضع کیا جائے گا تاکہ قرض خواہوں کی مختلف اقسام کو ازخود ترامیمی فوائد حاصل ہوسکیں ۔پہلی سہ ماہی کے دوران کمپنی نے ایک نیا پروگرام شروع کیا ہے،جس کے تحت قرضوں میں ترامیم کیلئے قرض خواہوں کوکوالیفائی کرنے کے قابل عمل اقدامات وضع کئے گئے ہیں ۔

        اس سہ ماہی کے دوران جمع کرائی گئی رقم کی مالیت میں اوسطاً 140بلین ڈالر یا پچھلے سال کے مقابلے میں 27فیصد کا اضافہ ہواہے، جس میں 107.3بلین ڈالرکا میرل لنچ اور کنٹری وائیڈ کا بیلنس بھی شامل ہے۔بینک آف امریکا کی ریٹل جمع شدہ رقم 32.7بلین ڈالر یاپچھلی سہ ماہی کے مقابلے میں چھ فیصد زیادہ ہے، جس میں میرل لنچ اور کنٹری وائیڈ شامل نہیں ہیں ۔

عبوری تازہ ترین معلومات:

میرل لنچ اپنے راستے پر گامزن ہے اور توقع ہے کہ کاسٹ سیونگ کاٹارگٹ حاصل کرلے گی۔سینئر اور درمیانے درجے کی انتظامیہ کی کاروبار کی تمام سطحوں پر تقرر یاں کرلی گئی ہیں ،جس میں عالمگیر تحقیق کا مکمل انضمام بھی شامل ہے۔اس کے علاوہ بڑی تعداد میں گاہکوں کا سامناکرنے والی ٹیم ،جو کارپوریٹ اور سرمایہ کاری بینکنگ اور گلوبل مارکیٹ میں کام کررہی ہے، اسے بھی مشترک کرنے کا کام جاری ہے۔

میرل لنچ کے مالیاتی مشیران اور بینک آف امریکا گاہکوں کوصحیح جگہ تک پہنچانے میں مصروف ہیں ۔میرل لنچ کے مالیاتی میشران بینک آف امریکا کے وسیع تر پروڈکٹ کے انضمام کے عمل میں مصروف ہیں تاکہ گاہکوں کو پورا سیٹ پیش کیا جاسکے۔اس کاروبار میں کامیابی حاصل ہوچکی ہے ،جس میں ڈپازٹ سرٹیفکیٹ کی فروخت شامل ہے،جہاں صرف فلوریڈا میں ان سرٹیفکیٹس کی 135ملین ڈالر سے زائد کے ڈپازٹ سرٹیفکیٹ فروخت ہوئے ہیں ۔اس پروگرام کو جلد ہی قومی سطح پر پھیلایا جائے گا۔

بینک آف امریکااور میرل لنچ سرمایہ کاری بینکنگ ٹیم نے اس سہ ماہی کے دوران مشترکہ طورپر کام کیااور بڑے پیمانے پر مشاورت اور مختلف مدوں میں سرمایہ کاری کی۔ ملک گیر سطح پر ٹرانزیشن کا کام جاری ہے۔محصولیات سے لاگت کی بچت اگلا مرحلہ ہیں ۔اس مہینے کے آخر میں بینک آف امریکا گھرکے قرض کا بیمہ اپنے صارفین میں متعارف کرائے گا۔

2009ءکی پہلی سہ ماہی کا مالیاتی خلاصہ:

ریونیواور اخراجات

مکمل طورپر قابل ٹیکس بنیاد پرخالص ریونیو منافع اخراجات پچھلے سال کے ریکارڈ36.1بلین ڈالر سے دگنے ہیں ۔

 خالص سودی آمدنی ،جو مکمل طورپرقابل ٹیکس بنیاد کے مترادف ہے ،میں 25فیصد اضافہ ہوا،یعنی2008ءکی پہلی سہ ماہی میں 10.3بلین ڈالرتھا،بڑھ کر 12.8بلین ڈالر ہوگیاہے،جس کا سبب شرح کے ماحول میں اضافہ،کنٹری وائیڈ اور میرل لنچ کی شمولیت اور مارکیٹ کی بنیاد پر سودی آمدنی میں بڑھوتری ہے۔ان بہتریوں پر سیکیورٹیزکی فروخت اورطویل دورانیے کے قرض سے متعلق بلند تر فنڈنگ کاسٹ کے اثرات مرتب ہوئے ہیں ۔گذشتہ سال کے دوران اثاثوں سے متعلق محصولات کے کم تر منافع کے باعث خالص منافع کی شرح 3سے گر کر2.7فیصد ہوگئی ۔

غیر سودی منافع میں سال گذشتہ کے23.3بلین ڈالر کے مقابلہ میں تین گنا اضافہ ہواہے۔تجارتی اکاؤنٹ کے منافع میں اضافہ ،سرمایہ کاری اور دلالی کی خدمات ،قرض کی سیکیورٹیزکی فروخت اورمیرل لنچ کی شمولیت کی صورت میں حاصل ہونے والی دیگر آمدنیاں ،جبکہ کنٹری وائیڈ کے حصول کے بعد رہن کی بنکاری میں اضافہ اور کم سودی شرح کی وجہ سے رہن سرگرمیوں میں اضافہ۔معدلتی سرمایہ کاری آمدنی جس میں چائناکنسٹرکشن بینک کے شیئر کی فروخت کے نتیجے میں 1.9بلین ڈالرکاقبل از ادائیگی ٹیکس کافائدہ شامل ہے۔بینک آف امریکاکے پاس چائناکنسٹرکشن بینک(CCB)کے17فیصدعام شیئر ابھی تک ہیں ۔یہ اضافہ کسی حد تک وہ زر تلافی ہے ،جو کارڈوں کی کم آمدنی کے باعث پیدا ہواہے،جس کا سبب کریڈٹ کارڈقرضوں کی بلند تر کریڈٹ قیمت اور ریوینوکی کمی ہے۔

گذشتہ سال کے9.3بلین ڈالر کے غیر سودی اخراجات اس سہ ماہی میں 17بلین ڈالر ہوگئے۔ کنٹری وائیڈ اورمیرل لنچ کے حصول کے بعد افرادی اور عام اخراجات میں 6.4بلین ڈالراضافہ ہوا۔ قبل از ادائیگی ٹیکس اور تشکیل نو کے اخراجات جو ان حاصلات کا نتیجہ ہیں گذشتہ برس کے170ملین ڈالر کے مقابلے میں 765ملین ڈالر ہوگئے۔

کریڈٹ کوالٹی

کریڈٹ کوالٹی ہر کاروبار میں مسلسل زوال پذیر ہے، کیونکہ مکانات کی قیمتوں میں تسلسل کے ساتھ کمی آرہی ہے اور معاشی ماحول کمزور ہواہے۔صارفین بےروزگاری اور کم تر درجہ کی ملازمتوں کے سبب نمایاں طورپر دباؤ کا شکار ہیں ۔یہ صورتحال تقریباً تمام اقسام کے صارفین کے بلند تر نقصانات کا سبب ہیں ۔

گرتی ہوئی مکانوں کی قیمتیں ، صارفین اورکاروبار کے اخراجات میں کمی مالیاتی مارکیٹ میں تسلسل کے ساتھ بے چینی کاروبار میں منفی اثرات کا حامل ہے۔کاروباری نقصانات میں پچھلی سہ ماہی سے اضافہ ہوا ،جس کا سبب مکانوں کی تعمیرکے بغیررئیل اسٹیٹ کے شعبہ میں عالمی بنکنگ کے اندر اور چھوٹے کاروبارکے حوالے سے عالمی کارڈ خدمات میں وسیع پیمانے پر ہونے والے نقصانات ہیں ۔

گذشتہ سال کی چوتھی سہ ماہی میں 8.5بلین ڈالر کے کریڈٹ کا نقصان اس سال 13.4بلین ڈالر تک پہنچ گیاہے۔،جس میں 6.4بلین ڈالر کا خالص لیز اور قرضہ کا نقصان بھی شامل ہے۔بہت سے صارفین کے حصص کیلئے جو محفوظ سرمایہ مہیاکیاگیا،اس نے صارفین پر معاشی دبا میں اضافہ کیا۔کمرشل حصص کیلئے بھی محفوظ سرمایہ میں اضافہ کیا گیا۔31 مارچ 2008ء کو غیر منافع والے اثاثے 7.8بلین ڈالر تھے، جو 31 دسمبر 2008ء کو 18.2 بلین ڈالر ہوگئے، جبکہ اس سہ ماہی میں 25.7 بلین ڈالر تک پہنچ گئے،جوہاؤسنگ کے حصص میں تنزلی کو ظاہر کرتاہے۔ذیل میں دئیے گئے جدول میں 2009ءکی کوریج شرح اوررقم کو ظاہر کیا گیا ہے، جس میں میرل لنچ بھی شامل ہے۔

کریڈٹ معیار کے شماریات

(ڈالرز ملین میں)                                      سہ ماہی اول 2009ء    سہ ماہی چہارم 2008ء           سہ ماہی اول 2008ء

کریڈٹ نقصانات کے لیے  فراہمی                 13،380 ڈالرز           8،535 ڈالرز             6،010 ڈالرز

خالص چارج-آف                                     6،942                    5،541                    2،715

نیٹ چارج-آف تناسب (1)                           2.85 فیصد               2.36 فیصد               1.25 فیصد

کل منظم شدہ خالص نقصانات                      9،124 ڈالرز             7،398 ڈالرز             4،131 ڈالرز

کل منظم شدہ خالص نقصانات تناسب (1)                  3.40 فیصد               2.84 فیصد               1.70 فیصد

                                                 3/31/09 پر              12/31/08 پر            3/31/08 پر

نان پرفارمنگ اثاثہ جات                             25،743ڈالرز            18،232ڈالرز            7،827 ڈالرز

نان پرفارمنگ اثاثہ جات تناسب (1)              2.65 فیصد               1.96 فیصد               0.90 فیصد

قرضہ جات اور لیز نقصانات کے لیے ادائیگی                     29،048 ڈالرز           23،071 ڈالرز           14،891 ڈالرز

قرضہ جات اور لیز نقصانات کے لیے ادائیگی تناسب (3)      3.00 فیصد               2.49 فیصد               1.71 فیصد

(1)  خالص چارج-آف/نقصان کے تناسب کا حساب سالانہ حاصل کردہ خالص چارج-آف یا منظم کردہ خالص نقصانات کی بنیاد پر لگایا جاتا ہے جنہیں عرصے کے دوران اوسط آؤٹ اسٹینڈنگ حاصل کردہ یا منظم کردہ قرضہ جات اور لیزز کی بنیاد پر تقسیم کیا جاتا ہے۔

(2)  نان پرفارمنگ اثاثہ جات کا تناسب نان پرفارمنگ اثاثہ جات کی بنیاد پر نکالا جاتا ہے جنہیں مقررہ عرصے کے اختتام پر قابل ادائیگی قرضہ جات، لیزز اور فورکلوزڈ پراپرٹیز کی بنیاد پر تقسیم کیا جاتا ہے۔

(3)  قرضہ جات اور لیز نقصانات کے لیے ادائیگی کا تناسب مقررہ عرصے کے اختتام پر قرضہ جات اور لیز نقصانات کے لیے  ادائیگی اور بقیہ قرضہ جات اور لیزز کے درمیان تقسیم کے ذریعے نکالا جاتا ہے۔

نوٹ: تناسب میں وہ قرضہ جات شامل نہیں جو SFAS 159 کے تحت مناسب قدر پر جانچے جاتے ہیں۔

کیپٹل مینجمنٹ

31 مارچ تک حصص یافتگان کی کل ایکوئٹی 239.5 ارب ڈالرز رہی۔ عرے کے اختتام پر اثاثہ جات 2.3 ٹریلین ڈالرز رہے۔ ٹائیر 1 کیپٹل کا تناسب 10.09 فیصد تھا، جو 31 دسمبر 2008ء کو 9.15 فیصد تھا اور ایک سال قبل کے 7.51 فیصد سے بھی زیادہ تھا۔ حقیقی عمومی حصص تناسب 3.13 فیصد رہا، جو 31 دسمبر 2008ء کو 2.93 فیصد سے زیادہ اور گزشتہ سال کے 3.21 فیصد سے کم رہا۔

جنوری میں میرل لنچ کے حصول کے سلسلے میں 20.5 ارب ڈالرز کے عمومی حصص جاری کیے گئے۔ ادارے نے میرل لنچ کے بقیہ ترجیحی اسٹاک کے تبادلے کے سلسلے میں 8.6 ارب ڈالرز کے ترجیحی شیئرز بھی جاری کیے۔ مزید برآں، ادارے نےامریکی محکمہ خزانہ کے لیے ٹربلڈ اثاثے  کی ریلیف پروگرام کے سلسلے میں 30.0 ارب ڈالرز کے ترجیحی اسٹاک جاری کیے۔ بینک آف امریکہ نے 0.01 فی عمومی شیئر کا کیش ڈیویڈنڈ ادا کیا۔ سہ ماہی کے دوران عمومی حصص یافتگان کے لیے دستیاب ترجیحی ڈیویڈنڈز کی آمدنی کم ہو کر 1.4 ارب ڈالرز تک ہو گئی۔ 2009ء کی پہلی سہ ماہی میں عرصے کے اختتام پر جاری کردہ اور بقیہ عمومی حصص 6.40 ارب تھے، 2008ء کی چوتھی سہ ماہی کے لیے 5.02 ارب اور ایک سال قبل سہ ماہی کے لیے 4.45 ارب تھی۔

پہلی سہ ماہی 2009ء کاروباری شعبہ کے نتائج

یکم جنوری سے موثر بینک آف امریکہ چھ اہم کاروباری شعبہ جات سے نتائج پیش کرتا ہے۔ سابق عالمی صارفی اور چھوٹے کاروباروں کے لیے بینکاری اب تین علیحدہ کاروباری شعبہ جات کی عکاس ہے: ڈپازٹس، گلوبل کارڈ سروس اور گھریلو قرضہ جات و انشورنس۔ سابق عالمی کارپوریٹ اور انوسٹمنٹ بینکاری اب گلوبل بینکنگ اور گلوبل مارکیٹس میں تقسیم ہے۔ گلوبل ویلتھ مینجمنٹ کے ساتھ یہ نتائج نیچے پیش کیے گئے ہیں۔ بعض مخصوص مقدم عرصوں کی مداروں کو موجودہ عرصے کی پیشکاری سے مطابقت دینے کے لیے دوبارہ منظم کیا گیا ہے۔

ڈپازٹس

(ڈالرز ملین میں)                            سہ ماہی اول 2009ء             سہ ماہی اول 2008ء

کل آمدنی، خالص از سودیاخراجات (1)          3،464 ڈالرز                       4،150 ڈالرز

کریڈٹ نقصانات کے لیے  فراہمی       311                                 246

غیر سودی اخراجات                       2،363                              2،216

خالص آمدنی                       493                                 1،060

اہلیت کا تناسب (1)                         68.20 فیصد                       53.37 فیصد

اوسط ایکوئٹی پر آمدنی                             8.41                                16.99

ڈپازٹس (2)                        377،575 ڈالرز                             339،464 ڈالرز

                                      3/31/09 پر                        3/31/08 پر

اختتامِ عرصہ پر ڈپازٹس                  391،604 ڈالرز                             345،990 ڈالرز

(1)  مکمل قابل محصول  برابری کی بنیاد پر

(2)  میزانیہ اوسط برائے عرصہ  

کم خالص آمدنی کے باعث گزشتہ سال کے مقابلے میں ڈپازٹس خالص آمدنی 53 فیصد تک کم ہو گئی۔ آمدنی میں کمی کی بنیاد وجہ کم بقایا خالص آمدنی کا تعین اور پیسے کی مارکیٹ ڈپازٹس اور ڈپازٹس کی سند بڑھتا دباؤ تھا۔ غیر سودی آمدنی 5 فیصد کم ہوئی جس کی وجہ موجودہ اقتصادی صورتحال میں صارفین کے خرچ کے حوالے سے تبدیل ہوتے رویے کے باعث کم ہوتی سروس چارج آمدنی تھی۔

اوسط صارفی ڈپازٹ میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 11 فیصد، یا 38 ارب ڈالرز، اضافہ ہوا جس کی وجہ کنٹری وائيڈ کا حصول اور مصنوعات کی چیکنگ اور بچت میں نامیاتی اضافہ تھا۔

گلوبل کارڈ سروسز

(ڈالرز ملین میں)                            سہ ماہی اول 2009ء             سہ ماہی اول 2008ء

کل منظم شدہ آمدنی، خالص

از سودی اخراجات (1) (2)               7،457 ڈالرز                       7،868 ڈالرز

کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی (3)   8،221 ڈالرز                       4،312 ڈالرز

غیر سودی اخراجات                       2،075                              2،199

خالص آمدنی (نقصان)            (1،769)                            867

موثریت کا تناسب (2)            27.83 فیصد                       27.95 فیصد

اوسط ایکوئٹی پر آمدنی                             n/m                                 9.18

منظم شدہ قرضہ جات (4)                 224،406 ڈالرز                             229،147 ڈالرز

                                      3/31/09 پر                        3/31/08 پر

اختتام عرصہ پر قرضہ جات             218،031 ڈالرز                             229،974 ڈالرز

(1)  منظم کردہ بنیادوں پر۔ منظم کردہ بنیاد پر فرض کیا جاتا ہے کہ کریڈٹ کارڈ قرضہ جات جو سیکورٹائزڈ ہیں فروخت نہیں کیے گئے اور اور ان قرضہ جات پر آمدنی کو اسی صورت میں پیش کیا جاتا ہے کہ قرضہ جات (جیسے زیر تحویل قرضہ جات) فروخت نہیں کیے گئے اور موجود ہیں۔ مزید معلومات اور تفصیلی مفاہمت کے لیے اس اعلامیہ کے ساتھ پیش کیے گئے ڈیٹا صفحات ملاحظہ کیجیے۔

(2)  مکمل قابل محصول  برابری کی بنیاد پر

(3)  زیرِ قبضہ قرضہ جات پر کریڈٹ نقصانات کے لیے ادائیگی کی نمائندگی کرتے ہیں جو سیکورٹائزڈ کریڈٹ کارڈ لون پورٹ فولیو کے ساتھ حقیقی کریڈٹ نقصانات سے منسلک ہیں

(4)  میزانیہ اوسط برائے عرصہ

n/m = بامعنی نہیں

گلوبل کارڈ سروسز، جس میں اب ڈیبٹ کارڈ شامل ہے تاکہ ادارے کے ادائیگی کاروبار کو بہتر انداز میں چلایا جا سکے، 1.8 ارب ڈالرز کے خالص نقصان کا شکار ہوا جس کی وجہ کمزور اقتصادی ماحول رہا جو کریڈٹ اخراجات میں اضافے کا باعث بنا۔ منظم کردہ خالص آمدنی 5 فیصد کمی کے ساتھ 7.5 ارب ڈالرز رہی جس کی وجہ کم فی انکم اور ایک سال قبل ویزا انکارپوریٹڈ کی ابتدائی عام پیشکش پر مثبت اثر کی ناپیدگی تھی۔ زیادہ خالص سودی آمدنی نے اس کمی کو عارضی طور پر سہارا دیا جس کی وجہ فنڈنگ پر آنے والے کم اخراجات تھے۔

صارف کارڈ، صارفین کو قرضہ ادائیگی اور چھوٹے کاروباری پورٹ فولیوزبشمول دیوالیہ پن میں اضافے کے باعث خراب ہونے والی اقتصادی صورتحال کے نتیجے میں گزشتہ سال کے مقابلے میں فراہمی کے اخراجات تقریباً دوگنے ہو کر 8.2 ارب ڈالرز ہو گئے۔ اس سلسلے میں سیکورٹائزیشن کو بہتر بنانے سے متعلقہ ریزرو ایڈیشنز نے بھی اپنا کردار ادا کیا۔

مارکیٹنگ سے متعلقہ اخراجات میں کمی کے باعث غیر سودی اخراجات 6 فیصد کم ہوئے۔

گھریلو قرضہ جات اور انشورنس

(ڈالرز ملین میں)                            سہ ماہی اول 2009ء             سہ ماہی اول 2008ء

کل آمدنی، خالص از

سودی اخراجات (1)                        5،224 ڈالرز                       1،372 ڈالرز

کریڈٹ نقصانات کے لیے  فراہمی       3،372                              1،812

غیر سودی اخراجات                       2،650                              722

خالص آمدنی (نقصان)            (498)                               (732)

موثریت کا تناسب (1)            50.73 فیصد                       52.66 فیصد

اوسط ایکوئٹی پر آمدنی                             n/m                                 n/m

قرضہ جات (2)                             126،696 ڈالرز                             87،238 ڈالرز

                                      3/31/09 پر                        3/31/08 پر

اختتامِ عرصہ پر قرضہ جات             131،343 ڈالرز                             88،321 ڈالرز

(1)  مکمل قابل محصول  برابری کی بنیاد پر

(2)  میزانیہ اوسط  برائے عرصہ

n/m = بامعنی نہیں

آمدنی میں اضافے کے ساتھ گھریلو قرضہ جات اور انشورنس میں خالص نقصان 498 ڈالرز کے قریب رہا، جس کو کم کرنے میں زیادہ کریڈٹ اخراجات اور غیر سودی اخراجات کا ہاتھ رہا۔ خالص آمدنی چار گنا اضافے کے ساتھ 5.2 ارب ڈالرز رہی جس کی بنیادی وجہ کنٹری وائيڈ کا حصول اور رہن بینکنگ آمدنی میں اضافہ رہی جبکہ کم سودی نرخوں رہن کےعمل میں تیزی کا باعث بنے۔

کریڈٹ اخراجات کے لیے فراہمی میں نقصانات 3.4 ارب ڈالرز رہے جس کی وجہ اقتصادی اور ہاؤسنگ مارکیٹ کی کمزوری تھی جو خصوصاً ان خطوں میں زیادہ رہی جہاں بے روزگاری کی شرح زیادہ تھی اور گھروں کی قیمتیں تیزی سے نیچے گریں۔

غیر سودی اخراجات 2.7 ارب ڈآلرز تک بڑھ گئے جس کی بنیادی وجہ کنٹری وائیڈ کا حصول تھا۔

گلوبل بینکنگ

(ڈالرز ملین میں)                            سہ ماہی اول 2009ء             سہ ماہی اول 2008ء

کل آمدنی، خالص از

سودی اخراجات (1)                        4،641 ڈالرز                       3،856 ڈالرز

کریڈٹ نقصانات کے لیے  فراہمی       1،848                              526

غیر سودی اخراجات                       2،511                              1،740

خالص آمدنی                       175                                 1،000

موثریت کا تناسب (1)            54.11 فیصد                       45.13 فیصد

اوسط ایکوئٹی پر آمدنی                             1.25                                8.73

قرضہ جات و لیزز (2)                    330،972 ڈالرز                             305،924 ڈالرز

ڈپازٹس (2)                        196،061                          160،726

(1)  مکمل قابل محصول برابری کی بنیاد پر

(2)  میزانیہ اوسط برائے عرصہ 

گلوبل بینکنگ کی کل آمدنی 175 ملین ڈالرز تک گر گئی کیونکہ کریڈٹ اخراجات میں اضافہ ہوا اورغیر سودی اخراجات بڑھ گئے۔

خالص آمدنی میں 20 فیصد اضافہ ہوا جس کی اہم وجہ میرل لنچ کی شمولیت،بہتر مشاورت اور کیپٹل مارکیٹ آمدنیاور قرضہ جاتی پھیلاؤ اوربڑھتے ہوئے ڈپازٹ میزانیہ کے باعث خالص سودی آمدنی میں آنے والی بہتری تھی۔

کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی 1.8 ارب ڈالرز تک بڑھ گئی جبکہ خالص چارج-آف اور ریزروز میں مستقل اضافہ ہوتا رہے، جسکی بنیادی وجہ ریئل اسٹیٹ اور خوردہ ڈيلر-متعلقہ پورٹ فولیوز تھے۔

         زیادہ قرضہ جات اور ڈپازٹ میزانیوں،  بڑھتے ہوئے قرضہ جاتی پھیلاؤ اور فی آمدنی اور صارفین کی جانب سے مالیات کے زیادہ روایتی فراہم کنندگان کی جانب پلٹنے کے نتیجے میں کارپوریٹ بینکنگ آمدنی 30 فیصد اضافے کے ساتھ 1.4 ارب ڈالرز رہی ۔ ان مثبت اثرات کو عارضی طور پر ڈپازٹ مازینوں پر کم سودی نرخوں کے اثرات کے باعث کم آمدنی نے نقصان پہنچایا۔

         کمرشل بینکنگ آمدنی 3 فیصد اضافے کے ساتھ 2.8 ارب ڈالرز رہی جسے ڈپازٹ میزانیوں میں 20 فیصد اضافے اور لون بیلنسز اور اسپریڈز دونوں میں زیادہ معتدل اضافے نے مہمیز عطا کیا۔ ایک سال قبل کی سہ ماہی میں ویزا انکارپوریٹڈ کی ابتدائی عمومی پیشکش کے مثبت اثرات بھی شامل تھے۔

         انوسٹمنٹ بینکنگ کی 433 ملین ڈالرز کی آمدنی میں انضمام اور حصول کی فیس،  قرضہ جات اور ایکوئٹی کیپٹل مارکیٹ فیس سے حاصل ہونے والا مارکیٹ حصص فائدہ شامل ہیں اور میرل لنچ کی شمولیت کے اثرات کی عکاسی کرتا ہے۔ انوسٹمنٹ بینکنگ آمدنی دوگنی سے زائد ہوگئی، جس کا باعث ڈیٹ کیپٹل میں اضافے اور مشاورتی فیس رہیں۔

         نوٹ: سہ ماہی میں کل انوسٹمنٹ بینکنگ آمدنی 1.1 ارب ڈالرز رہی جو داخلی فی-شیئرنگ انتظامات کی بنیاد پر دونوں شعبوں گلوبل بینکنگ اور گلوبل مارکیٹس کے درمیان شیئرڈ تھی۔ مشاورتی فی آمدنی گزشتہ سال کی سہ ماہی کے مقابلے میں 4 گنا سے زائد ہوئی، جبکہ ڈیٹ کیپٹل سے حاصل ہونے والی فیس تقریباً دوگنی ہو گئی، جو میرل لنچ کے حصول سے بڑھتے ہوئے حجم اور پھیلاؤ کو ظاہر کرتی ہے۔

گلوبل مارکیٹس

(ڈالرز ملین میں)                            سہ ماہی اول 2009ء             سہ ماہی اول 2008ء

کل آمدنی، خالص از

سودی اخراجات (1)                        6،791 ڈالرز                       (848) ڈالرز

کریڈٹ نقصانات کے لیے  فراہمی       51                                   (1)

غیر سودی اخراجات                       3،059                              726

خالص آمدنی                       2،365                              (991)

موثریت کا تناسب (1)            45.04فیصد                        n/m

اوسط ایکوئٹی پر آمدنی                             33.81                              n/m

قرضہ جات و لیزز (2)                    18,610ڈالرز                      20,927ڈالرز

تجارت سے متعلقہ اثاثہ جات (2)        536،977                          357،488

ڈپازٹس (2)                        8،516                              13،486

(1)  مکمل قابل محصول برابری کی بنیاد پر

(2)  میزانیہ اوسط برائے عرصہ 

n/m = بامعنی نہیں

میرل لنچ کے حصول اور مارکیٹ میں بگاڑ کے نتیجے میں پوزیشنوں پر کم نقصانات کے باعث گلوبل مارکیٹس نے 2.4 ارب ڈالرز کی آمدنی حاصل کی، آخر الذکر میں متوازی قرضہ جاتی عہد (CDOs)، لیوریجڈ لینڈنگ اور کمرشل مورگیج شامل ہیں۔

خالص آمدنی 6.8 ارب ڈالرز تھی، جس میں مارکیٹ میں بگاڑ کے نتیجے میں پوزیشنوں پر ہونے والے نقصانات کے 1.7 ارب ڈالرز بھی شامل ہیں۔ خالص آمدنی میں یہ اضافہ میرل لنچ کی شمولیت ،سود میں مستحکم تجارتی نتائج اور  کرنس ریٹ مصنوعات، ایکوئٹیز اور کموڈیٹیز سے تیز ہوا۔

         3.6 ارب ڈالرز کی نرخ اور کرنسی آمدنی کو مصنوعات کے عالمی پھیلاؤ اور میرل لنچ کی شمولیت سے حاصل ہونے والی تقسیمی صلاحیتوں اور سود اور کرنسی کے نرخوں میں بڑھتے ہوئے عدم استحکام نے مہمیز عطا کیا۔

         بالترتیب 1.2 ارب اور 890 ملین ڈالرز کی مورگیج اور کریڈٹ آمدنی میں آغاز و تقسیم سے متعلق اور ساتھ ساتھ نچلی مارکیٹ لیکوئیڈٹی سے ہونے والے نقصانات کی قانونی ادارہ جاتی پلیٹ فارمز کی تکمیلی فطرت شامل ہیں۔

         1.4 ارب ڈالرز کی ایکوئٹیز آمدنی کے اضافے کی اہم وجہ میرل لنچ کا حصول تھا، اس کے باوجود کہ آغاز مارکیٹ اور نچلی مالیاتی آمدنی کے مواقع کم تھے جو صارفین کی ڈی لیوریجنگ کا نتیجہ تھے۔

         536 ملین ڈالرز کا کمیوڈٹیز ریونیو بجلی و قدر تی گیس کی مارکیٹ کے باعث رہا۔

گلوبل ویلتھ مینجمنٹ

(ڈالرز ملین میں)                            پہلی سہ ماہی 2009ء                      پہلی سہ ماہی 2008ء

کل آمدنی، خالص از

سودی اخراجات (1)                        4،361ڈالرز                        1،942 ڈالرز

کریڈٹ نقصانات کے لیے  فراہمی       254                                 243

غیر سودی اخراجات                       3،288                              1،314

خالص آمدنی                       510                                 242

موثریت کا تناسب (1)            75.41فیصد                        67.71 فیصد

اوسط ایکوئٹی پر آمدنی                             11.21                              8.40

قرضہ جات (2)                             110،533ڈالرز                              85،644ڈالرز

ڈپازٹس (2)                        249،350                          148،503

 

(بلین میں)                          3/31/09 پر                        3/31/08 پر

اثاثہ زیر انتظام                    697.3 ڈالرز                       607.5 ڈالرز

(1)  مکمل قابل محصول برابری کی بنیاد پر

(2)  میزانیہ اوسط برائے عرصہ

میرل لنچ کے حصول کے باعث خالص آمدنی دوگنی سے زائد ہو کر 510 ملین ڈالرز ہو گئی جسے عارضی طور پر بینک آف امریکہ کی جانب سے کم خالص آمدنی نے نقصان پہنچایا۔

سرمایہ کاری اور بروکریج سروس آمدنی 2.4 ارب ڈالرز تک بڑھنے اور میرل لنچ کے حصول کے باعث خالص سودی آمدنی میں 62 فیصد تک اضافے کے باعث خالص آمدنی 4.4 ارب ڈالرز تک بڑھ گئی۔

         یو ایس ٹرسٹ، بینک آف امریکہ پرائیوٹ ویلتھ مینجمنٹ کی خالص آمدنی 28 فیصد کمی کے ساتھ 95 رہی جبکہ خالص آمدنی میں کمی اور کریڈٹ اخراجات میں اضافہ ہوا۔ کم تر سرمایہ کاری اور بروکریج سروسز آمدنی پر خالص آمدنی 4 فیصد کمی کے ساتھ 692 ملین ڈالرز رہی۔

         کولمبیا مینجمنٹ میں خالص نقصان گزشتہ سال کے اسی عرصے کے دوران 82 ملین ڈالرز کے مقابلے میں اس سال 50 ملین ڈالرز رہا جس کی بنیادی وجہ متعدد کیش فنڈز کو فراہم کردہ سپورٹ میں 103 ملین ڈالرز کی تخفیف رہی، سرمایہ کاری اور بروکریج فیس پر اسے عارضی طور پر زوال پذیر ایکوئٹی مارکیٹوں کے اثرات نے نقصان پہنچایا۔

         گلوبل ویلتھ ایڈوائزرز، جو میرل لنچ کی ویلتھ مینجمنٹ آرگنائزیشن پر مشتمل ہے، نے 565 ملین ڈالرز کی خالص آمدنی حاصل کی، جو گزشتہ سال اسی عرصے کے دوران 176 ملین ڈالرز تھی۔ اس بہتری کا سبب حصول سے ہونے والی آمدنی کے مثبت اثرات تھے۔ میرل لنچ کے حصول کے نتیجے میں اثاثہ جات کے انتظام کی فیس اور بروکریج آمدنی میں اضافے کے باعث خالص آمدنی گزشتہ سال کے 983 ملین ڈالرز کے مقابلے میں اس سال بڑھ کر 3.3 ارب ڈالرز رہی جسے عارضی طور پر کم تر ایکوئٹی مارکیٹوں اور بڑھتے ہوئے دباؤ کے باعث نقصان پہنچا۔

تمام دیگر (1،2)

(ڈالرز ملین میں)                       سہ ماہی اول 2009ء             سہ ماہی اول 2008ء

کل آمدنی، خالص از

سودی اخراجات (3)                                 4،142ڈالرز                        (969) ڈالرز

کریڈٹ نقصانات کے لیے  فراہمی                (677)                               (1،128)

غیر سودی اخراجات                                 1،056                              346

خالص آمدنی                                 2،971                              (236)

قرضہ جات و لیزز (4)                             168،450 ڈالرز                             133،883 ڈالرز

(1)  ‘تمام دیگر ‘ اِن پر مشتمل ہے: ایکوئٹی سرمایہ کاری، اثاثہ و قرضہ جات کے انتظام (ALM) سرگرمیوں سے متعلقہ رہائشی مورگیج پورٹ فولیو، اخراجاتی تعین کے عمل کے بقیہ اثرات، انضمام اور تنظیم نو کے اخراجات، بین الشعبہ جاتی اخراج، میرل لنچ کے تیار کردہ متعدد نوٹس سے متعلقہ مناسب قدر اور تحلیل کیے جانے والے متعدد صارفی مالیات، سرمایہ کاری انتظام اورکمرشل لینڈنگ کاروبار  کے نتائج۔ تمام دیگر میں منظم کردہ بنیادوں پر موجودہ گلوبل کارڈ سروسز کی آف سیٹنگ سیکورٹائزیشن بھی شامل ہے۔  مزید معلومات اور تفصیلی مفاہمت کے لیے اس اعلامیہ کے ساتھ فراہم کردہ ڈیٹا صفحات ملاحظہ کیجیے۔

(2)  یکم جنوری 2009ء سے موثر تمام دیگر میں فرسٹ ریپبلک بینک کے نتائج شامل ہیں، جو میرل لنچ کے حصول کے نتیجے میں حاصل کیا گیا۔

(3)  مکمل قابل محصول برابری کی بنیاد پر

(4)  میزانیہ اوسط برائے عرصہ

تمام دیگر نے 3.0 ارب ڈالرز کی خالص آمدنی حاصل کی جو گزشتہ سال 236 ملین ڈالرز کے خالص خسارے کا شکار تھی۔ میرل لنچ کے تیار کردہ متعدد نوٹس کے حوالے سے مناسب قدر کا تطابق، ڈیٹ سیکورٹیز کی فروخت پر بڑھتے ہوئے منافع اور اعلیٰ تر ایکوئٹی انوسٹمنٹ آمدنی جو سی سی بی حصص کی فروخت پر ہونے والے منافع سے متعلق تھی۔ رہائشی مورگیج پورٹ فولیو میں بگاڑ کے باعث کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی میں اضافہ ہوا۔ میرل لنچ کے حصول کے حوالے سے انضمام اور تنظیم نو کے اخراجات کے باعث غیر سودی اخراجات میں اضافہ ہوا۔

نوٹ: چیئرمین اور چیف ایگزیکٹو افسر کینتھ ڈی لوئس اور چیف فنانشل آفیسر جو لی پرائس آج 9 بجکر 30 منٹ صبح EDT پر ایک کانفرنس کال میں پہلی سہ ماہی 2009ء کے نتائج پر گفتگو کریں گے۔ پریزینٹیشن اور متعلقہ مواد تک رسائی بینک آف امریکہ سرمایہ کار تعلقات کی ویب سائٹ http://investor.bankofamerica.com سے حاصل کی جا سکتی ہے۔ کانفرنس کال صرف سننے کے لیے کنکشن کے لیے رابطہ کیجیے 1.877.200.4456 (امریکہ) 1.785.424.1732 (بین الاقوامی) اور کانفرنس آئی ڈی: 79795۔

بینک آف امریکہ

بینک آف امریکہ دنیا کے بڑے مالیاتی اداروں میں سے ایک ہے جو انفرادی صارفین، چھوٹے اور درمیانے درجے کےکاروباروں اور بڑے اداروں کو بینکاری، سرمایہ کاری، اثاثہ جات کے انتظام اور دیگر مالیاتی اوررسک مینجمنٹ مصنوعات اور خدمات فراہم کرتا ہے۔ ادارہ امریکہ میں بے مثال سہولیات پیش کرتا ہے جہاں وہ 6،100 شاخوں، تقریباً 18،700 اے ٹی ایمز کے ذریعے 55 ملین سے زائد صارفین اور چھوٹے کاروباری اداروں کو اور ایوارڈ یافتہ آن لائن بینکاری کے ذریعے تقریباً 30 ملین متحرک صارفین کو خدمات فراہم کرتا ہے۔ بینک آف امریکہ دنیا کی بڑی ویلتھ مینجمنٹ کمپنیوں میں سے ایک ہے اور کارپوریٹ اور انوسٹمنٹ بینکاری اور ٹریڈنگ میں عالمی رہنما کی حیثیت رکھتا ہے جو دنیا بھر میں اثاثہ کے مختلف درجات میں کارپوریشنز، حکومتوں، اداروں اور انفرادی سطح پر افراد کے لیے خدمات انجام دے رہا ہے۔ بینک آف امریکہ جدید، آسان استعمال کی آن لائن مصنوعات اور خدمات کے مجموعے کے ذریعے 4 ملین سے زائد چھوٹے کاروباری مالکان صنعت کی بہترین سپورٹ پیش کرتا ہے۔ ادارہ 150 سے زائد ممالک میں صارفین کو خدمات فراہم کرتا ہے۔ بینک آف امریکہ کارپوریشن کے حصص (این وائی ایس ای: BAC)  ڈاؤ جونز انڈسٹریل ایوریج کا حصہ ہیں اور نیویارک اسٹاک ایکسچینج میں درج ہیں۔

بینک آف امریکہ اور اس کی انتظامیہ ایسے متعدد بیانات جاری کر سکتی ہے جو پرائیوٹ سیکورٹیز لٹی گیشن ریفارم ایکٹ 1995ء کے تحت “مستقبل کے حوالے سے بیانات” کے ضمن میں آ سکتے ہیں۔

مستقبل کے حوالے سے یہ بیانات تاریخی حقائق نہیں ہیں، لیکن یہ بینک آف امریکہ کی موجودہ امیدوں و توقعات، ارادے اور مستقبل کی آمدنی، حصول کی تکمیل اور متعلقہ اخراجات پر بچت، قرضوں کی ترمیم، سرمایہ کاری بینک درجہ بندی، قرضہ جات اور ڈپازٹ کی نمو، مورگیج کی تخلیق اور مارکیٹ شیئر، کریڈٹ خسارے، کریڈٹ ذخیرے اور چارج-آف، صارفی کریڈٹ کارڈ خالص خسارہ تناسب، محصول نرخ، مورگیج کی بنیاد پر سیکورٹیز پر ادائیگی، عالمی مارکیٹوں کی تخلیق اور تجارت اور دیگر ملتے جلتے معاملات شامل ہیں۔ یہ بیانات مستقبل کے نتائج یا کارکردگی کے حوالے سے ضمانت نہیں دیتے اور مختلف خطرات، غیر ممکنات اور مفروضات کے حامل ہوتے ہیں جن کے بارے میں قبل از وقت کچھ کہنا مشکل ہے اور کئی بینک آف امریکہ کے ضابطے سے باہر ہیں۔ حقیقی نتائج ممکنہ نتائج سے یکسر مختلف ہو سکتے ہیں یا ایسے بھی ہو سکتے ہیں جن کا ان مستقبل کے حوالے سے بیانات میں ذکر نہیں کیا گیا۔

آپ کو مستقبل کے حوالے سے ان بیانات پر بہت زیادہ بھروسہ نہیں کرنا چاہیے اور مندرجہ ذیل ممکنہ واقعات یا عوامل اور بینک آف امریکہ کی کسی بھی شاخ میں اور بینک آف امریکہ کی 2008ء سالانہ رپورٹ کے فارم 10-K میں شق 1A “خطرات کے عوامل” کو ضرور ملاحظہ کرنا چاہیے جس میں ان خطرات پر تفصیلی بحث کی گئی ہے جو نتائج یا کارکردگی کو مستقبل کے حوالے سے بیانات میں پیش کردہ ممکنہ نتائج سے یکسر مختلف کر سکتے ہیں: منفی معاشی صورتحال جو عام معیشت، گھروں کی قیمتوں، روزگار مارکیٹ، صارف، اعتماد اور خرچ کرنے کی عادت پر منفی اثرات مرتب کرے؛  کیپٹل مارکیٹوں، سودی نرخوں، شرح تبادلہ اور مارکی انڈیکس کی سطح اور عدم استحکام؛ صارف، سرمایہ کار اور شراکت دار کے اعتماد میں تبدیلی اور اس کے مالیاتی مارکیٹوں اور اداروں پر مرتب ہونے والے اثرات؛ بینک آف امریکہ کی کریڈٹ ریٹنگ اور اس کی سیکورٹائزیشنز کی کریڈٹ ریٹنگز؛ بینک آف امریکہ کے اثاثہ جات اور قرضہ جات کی مناسب قدر کا تخمینہ؛ امریکہ اور بین الاقوامی طور پر قانونی اور ضوابطی عوامل کے اثرات، بشمول لاگت، اخراجات، تصفیے اور فیصلے؛ امریکہ اور بین الاقوامی حکومتوں کے مختلف مالیاتی پالیسیوں اور ضوابط؛ حسابات کے معیارات، قوانین اور تصریحات میں تبدیلیاں اور بینک آف امریکہ کے مالیاتی اسٹیٹمنٹ پر اس کے پڑنے والے اثرات؛  مالیاتی خدمات کےی صنعت کی بڑھتی ہوئی عالمگیری اور امریکی اور بین الاقوامی مالیاتی اداروں کے درمیان بڑھتی ہوئی مسابقت؛ بینک آف امریکہ کی نئے ملازمین کی توجہ اپنی جانب مبذول کرانے اور موجودہ ملازمین کو برقرار اور متحرک رکھنے کی صلاحیت؛ انضمام اور حصول اور بینک آف امریکہ میں ان کی تکمیل؛ بینک آف امریکہ کی ساکھ؛ اور یونٹس کو ڈاؤن سائز، فروخت یا بندر کرنے کے فیصلے یا دوسرے طور پر بینک آف امریکہ کی کاروباری آمیزش کو تبدیل کرنا۔  مستقبل کے حوالے سے بیانات صرف تاریخ اجراءتک کے حوالے سے بحث کرتے ہیں اور بینک آف امریکہ ان بیانات کو تازہ تر کرتے رہنے کی کوئی ذمہ داری نہیں لیتا کہ وہ اجراءکی تاریخ کے بعد کسی بھی صورتحال یا واقعے کے اثرات کو ظاہر کرنے کے لیے ان میں تبدیلیاں لائے۔

کولمبیا مینجمنٹ: کولمبیا مینجمنٹ گروپ، ایل ایل سی (“Columbia Management“) بینک آف امریکہ کارپوریشن کا بنیادی سرمایہ کاری انتظام کا شعبہ ہے۔ کولمبیا مینجمنٹ کا وجود ادارہ جاتی اور انفرادی سرمایہ کاروں کے لیے سرمایہ کاری کے انتظام کی خدمات و مصنوعات کومہیا کرتا ہے۔ کولمبیا مینجمنٹ ڈسٹری بیوٹرز انکارپوریٹڈ کولمبیا فنڈز اور ایکسیلسیئر فنڈز تقسیم کرتا ہے ، یہ ادارہ FINRA اور SIPC کا رکن ہے۔ کولمبیا مینجمنٹ ڈسٹری بیوٹرز انکارپوریٹڈ کولمبیا مینجمنٹ کا حصہ ہے اور بینک آف امریکہ کارپوریشن کا ملحقہ ادارہ ہے۔

سرمایہ کاروں کو سرمایہ کاری سے قبل سرمایہ کاری کے مقاصد، خطرات، کولمبیا فنڈ یا ایک سیلسیئر فنڈ کی لاگت اور اور اخراجات پر غور کرنا چاہیے۔ کوائف نامے کے لیے اپنے کولمبیا مینجمنٹ نمائندے سے رابطہ کیجیے، اس کوائف نامے میں فنڈ کے بارے میں یہ اور دیگر اہم معلومات درج ہیں۔ سرمایہ کاری سے قبل اس کا بغور مطالعہ کیجیے۔

www.bankofamerica.com

بینک آف امریکہ کارپوریشن اور ماتحت ادارے

منتخب مالیاتی ڈیٹا

(ڈالرز ملین میں، علاوہ فی حصص ڈیٹا؛ حصص ہزار میں)

تین ماہ اختتام

خلاصہ آمدنی اسٹیٹمنٹ                                                31 مارچ

—————–                                                        ——–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

خالص سودی آمدنی                                  12،498 ڈالرز           9،991 ڈالرز

کل غیر سودی آمدنی                                 23،261                   7،080

                                                ——-                    ——–

کل آمدنی                                               35،758                   17،071

کریڈٹ نقصانات کے لیے ادائیگی                 13،380                   6،010

غیر سودی اخراجات، قبل از انضمام

و تنظیم نو اخراجات                                 16،237                   9،093

انضمام و تنظیم نو کے اخراجات                            765                       170

                                                —-                        —–

آمدنی قبل از انکم ٹیکسز                            5،376                    1،798

انکم ٹیکس اخراجات                                1،129                    588

                                                —–                       —–

خالص آمدنی                                 4،247 ڈالرز             1،210 ڈالرز

                                                ======                ======

ترجیحی اسٹاک ڈیویڈنڈ                                        1،433                    190

                                                ——                      —–

خالص آمدنی قابل اطلاق برائے

عمومی حصص یافتگان                                       2،814 ڈالرز             1،020 ڈالرز

                                                ======                ======

آمدنی فی عمومی حصص                                     0.44 ڈالرز               0.23 ڈالرز

تحلیلی آمدنی فی عمومی حصص                            0.44                      0.23

 

تین ماہ اختتام

خلاصہ اوسط بیلنس شیٹ                                    31 مارچ

—————–                                               ——–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

کل قرضہ جات و لیزز                              994،121 ڈالرز                   875،661 ڈالرز

ڈیٹ سیکورٹیز                                       286،249                 219،377

کل کمائے گئے اثاثہ جات                           1،912،483              1،510،295

کل اثاثہ جات                                2،519،134              1،764،927

کل ڈپازٹس                                   964،081                 787،623

حصص یافتگان کی ایکوئٹی                       228،766                 154،728

عمومی حصص یافتگان کی ایکوئٹی                       160،739                 141،456

 

تین ماہ اختتام

کارکردگی تناسب                                               31 مارچ

—————–                                               ——–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

اوسط اثاثہ جات پر آمدنی                           0.68 فیصد               0.28 فیصد

اوسط عمومی حصص یافتگان کی

ایکوئٹی پر آمدنی                                     7.10                      2.90

 

تین ماہ اختتام

کریڈٹ معیار                                          31 مارچ

—————–                                               ——–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

کل نیٹ چارج-آف                                    6،942 ڈالرز             2،715 ڈالرز

سالانہ کردہ خالص چارج آف بطور فیصد

از اوسط قرضہ جات اور لیزز بقایا (1)                    2.85 فیصد               1.25 فیصد

کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی                 13،380 ڈالرز           6،010 ڈالرز

کل صارفی کریڈٹ کارڈ

منظم شدہ خالص نقصانات                          3،794                    2،372

کل صارفی کریڈٹ کارڈ منظم شدہ

خالص نقصانات بطور فیصد

از اوسط منظم کریڈٹ کارڈ قابل وصول                    8.62 فیصد               5.19 فیصد

 

                                                          31 مارچ

——–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

کل نان پرفارمنگ اثاثہ جات                       25،743 ڈالرز           7،827 ڈالرز

نان پرفارمنگ اثاثہ جات بطور فیصد

از کل قرضہ جات ، لیزز اور گروی جائیداد (1)         2.65 فیصد               0.90 فیصد

ادائیگی برائے قرضہ جات و لیز نقصانات                29،048 ڈالرز           14،891 ڈالرز

ادائیگی برائے قرضہ جات و لیز نقصانات

بطور فیصد از کل قرضہ جات و لیزز (1)                3.00 فیصد               1.71 فیصد

 

کیپٹل مینجمنٹ                                                 31 مارچ

—————–                                               ——–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

خطرےکی بنیاد پر سرمائے کا تناسب:

ٹائیر  1                                                10.09 فیصد             7.51 فیصد

کل                                             14.03                     11.71

حقیقی ایکوئٹی تناسب (2)                          6.42                      4.26

حقیقی عمومی ایکوئٹی تناسب (3)                          3.13                      3.21

اختتام عرصہ عمومی حصص جاری

کردہ اور بقایا                                6،400،950              4،452،810

 

تین ماہ اختتام

                                                          31 مارچ

                                                          ——–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

جاری کردہ حصص (4)                             1،383،514              14،925

اوسط عمومی حصص جاری کردہ و بقایا                  6،370،815              4،427،823

اوسط تحلیلی عمومی حصص جاری کردہ و بقایا                   6،431،027              4،461،201

ڈیویڈنڈز ادا کردہ فی عمومی حصص                       0.01 ڈالرز               0.64 ڈالرز

 

خلاصہ اختتامِ عرصہ بیلنس شیٹ                                    31 مارچ

—————–                                               ——–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

کل قرضہ جات و لیزز                              977،008 ڈالرز                   873،870 ڈالرز

کل ڈیٹ سیکورٹیز                                   262،638                 223،000

کل کمائے گئے اثاثہ جات                           1،714،460              1،458،017

کل اثاثہ جات                                2،321،963              1،736،502

کل ڈپازٹس                                   953،508                 797،069

حصص یافتگان کی کل ایکوئٹی                             239،549                 156،309

عمومی حصص یافتگان کی ایکوئٹی                       166،272                 139،003

عمومی حصص کی بہی قدر و قیمت فی حصص                  25.98 ڈالرز             31.22 ڈالرز

————————————

(1)  SFAS 159 سے مطابقت رکھتے ہوئے تناسب میں 31 مارچ 2009ء اور 2008ء کو ختم ہونے والی سہ ماہیوں میں مناسب قدر کے پیمانے پر قرضہ جات شامل نہیں ۔

(2)  حقیقی ایکوئٹی تناسب برابر ہے حصص یافتگان کی ایکوئٹی تفریق نیک نامی اور غیر حقیقی اثاثہ جات (علاوہ مورگیج سروسنگ حقوق)، خالص از متعلقہ التوا محصول قرضہ جات تقسیم از کل اثاثہ جات تفریق نیک نامی اور غیر حقیقی اثاثء جات (علاوہ مورگیج سروسنگ حقوق)، خالص از متعلقہ التوا محصول قرضہ جات ۔

(3)  حقیقی عمومی ایکوئٹی تناسب برابر ہےعمومی حصص یافتگان کی ایکوئٹی تفریق نیک نامی اور غیر حقیقی اثاثہ جات (علاوہ مورگیج سروسنگ حقوق) خالص از متعلقہ التوا محصول قرضہ جات تقسیم از کل اثاثہ جات تفریق نیک نامی و غیر حقیقی اثاثہ جات (علاوہ مورگیج سروسنگ حقوق) ، خالص از متعلقہ التوا محصول قرضہ جات۔

(4)  میرل لنچ کے حصول میں جاری کردہ تقریباۂ 1.375 ارب حصص شامل

متعدد ادوارِ قبل از کی مقدار کو موجودہ دور کی پریزنٹیشن کے مطابق بنانے کے لیے از سر نو زمرہ بند کیا گیا ہے۔

یکم جولائی 2008ء سے شروع ہونے والے دور کے لیے معلومات میں کنٹری وائیڈ کا حصول شامل ہے۔

یکم جنوری 2009ء سے شروع ہونے والے دور کے لیے معلومات میں میرل لنچ کا حصول  شامل ہے۔ اس سے قبل کے ادوار کو نئے سرے سے بیان نہیں کیا گیا۔

یہ معلومات ابتدائی ہے اور پیش کرنے کے وقت پر موجودہ ادارے کے دستیاب ڈیٹا کی بنیاد پر تیار کی گئی ہے۔

بینک آف امریکہ کارپوریشن اور ماتحت ادارے

کاروباری شعبے کے نتائج

——————–

(ڈالرز ملین میں)

برائے تین ماہ

اختتام 31 مارچ

 

                                                          گلوبل کارڈ                                             گھریلو قرضہ جات اور 

                              ڈپازٹس                             سروسز (1،2)                               انشورنس

                             ——–                             ———–                                   ————-

                    2009            2008            2009            2008            2009            2008

                    ——-           ——-           ——-           ——-           ——-           ——-

کل آمدنی،

خالص از سودی

اخراجات (3)   3،464           4،150           7,457           7,868           5,224           1,372

کریڈٹ نقصانات         311              246                       8,221           4,312           3,372           1,812

غیر سودی

اخراجات                  2,363           2,216           2,075           2,199           2,650           722

خالص آمدنی

(نقصان)                  493                       1,060           (1,769)         867                       (498)              (732)

موثریت کا

تناسب (3)      68.20%        53.37%        27.83%        27.95%        50.73%           52.66%

اوسط ایکوئٹی

پر آمدنی                  8.41                      16.99           n/m              9.18             n/m              n/m

اوسط-

کل قرضہ جات

و لیزز           n/a               n/a               224,406       229,147       126,696       87،238

اوسط-

کل ڈپازٹس      377،575       339،464       n/a               n/a               n/a               n/a

 

گلوبل ویلتھ

گلوبل بینکنگ                     گلوبل مارکیٹس                               مینجمنٹ

————                        ————                      ————

2009            2008            2009            2008            2009            2008

کل آمدنی،

خالص از سودی

اخراجات (3)   4,641           3,856           6,791           (848)                     4,361           1,942

کریڈٹ نقصانات

کے لیے فراہمی         1,848           526              51                         (1)                         254                        243

غیر سودی

اخراجات                  2,511           1,740           3,059           726                       3,288           1,314

خالص آمدنی    175                       1,000           2,365           (991)           510                       242

 

موثریت

کا تناسب(3)    54.11%        45.13%        45.04%        n/m              %75.41     67.71% 

اوسط ایکوئٹی

پرآمدنی                   1.25             8.73                      33.81           n/m              11.21           8.40

اوسط-

کل قرضہ جات

و لیزز           330,972       305,924       18,610         20,927         110,533         85,644

اوسط –

کل ڈپازٹس      196,061       160,726       8,516           13,486         249,350        148,503

 

تمام دیگر (1،4)

—————-

                   2009            2008

                   ——–                   ——–

کل آمدنی،

خالص از سودی

اخراجات (3)   4،142ڈالرز    (969) ڈالرز

کریڈٹ نقصانات

کے لیے فراہمی         (677)           (1،128)

غیر سودی

اخراجات                  1،056           346

خالص آمدنی    2،971           (236)

 

اوسط –

اوسط قرضہ جات

و لیزز           168،450ڈالرز          133،883ڈالرز

اوسط-

کل ڈپازٹس      109،890       113،219

————-

(1)  گلوبل کارڈ سروسز منظم کردہ بنیادوں پر پیش کی گئی ہے جو تمام دیگرشعبوں میں متوازن طور پر ڈالی گئی ہے۔

(2)  کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی کریڈٹ نقصانات پر زیر قبضہ قرضہ جات کے ساتھ سیکورٹائزڈ لون پورٹ فولیو میں حقیقی کریڈٹ نقصانات کی نمائندگی کرتی ہے۔

(3)  مکمل قابل محصول برابری (FTE) بنیادپر۔ ایف ٹی ای بنیاد یہ کارکردگی کا پیمانہ ہے جو انتظامیہ کاروبار کو چلانے میں استعمال کرتی ہےجس کے ذریعے وہ سرمایہ کاروں کو مقابلاتی مقاصد کے لیےانتظامی سودی مارجن کی حقیقی ترین تصویر پیش کرتی ہے۔

(4)  کریڈٹ اخراجات کے لیےفراہمی گلوبل کارڈ سروسز سیکورٹائزیشن آف سیٹ کے ساتھ تمام دیگر میں کریڈٹ نقصانات کو ظاہر کرتی ہے۔

n/m = بامعنی نہیں

متعدد ادوارِ قبل از کی مقدار کو موجودہ دور کی پریزنٹیشن کے مطابق بنانے کے لیے از سر نو زمرہ بند کیا گیا ہے۔

یکم جولائی 2008ء سے شروع ہونے والے دور کے لیے معلومات میں کنٹری وائیڈ کا حصول شامل ہے۔

یکم جنوری 2009ء سے شروع ہونے والے دور کے لیے معلومات میں میرل لنچ کا حصول  شامل ہے۔ اس سے قبل کے ادوار کو نئے سرے سے بیان نہیں کیا گیا۔

یہ معلومات ابتدائی ہے اور پیش کرنے کے وقت پر موجودہ ادارے کے دستیاب ڈیٹا کی بنیاد پر تیار کی گئی ہے۔

 

بینک آف امریکہ کارپوریشن اور ماتحت ادارے

منسلکہ مالیاتی ڈیٹا

—————

(ڈالرز ملین میں)

                                                          تین ماہ

مکمل قابل محصول برابری کی بنیاد پر ڈیٹا                        اختتام 31 مارچ

———————————–                ————–

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

خالص سودی آمدنی                                  12,819ڈالرز            10,291 ڈالرز

کل آمدنی، خالص از سودی اخراجات             36,080                   17,371

خالص سودی محاصل                               2.70 فیصد               2.73 فیصد

موثریت تناسب                                       47.12                     53.32

 

دیگر ڈیٹا                                                        31 مارچ

———————————–                ———

                                                2009                      2008

                                                ——-                    ——–

کل-وقتی مساوی ملازمین                           284,802                 209,096

بینکاری مراکز کی تعداد – مقامی                           6،145                    6،148

برانڈڈ اے ٹی ایمز کی تعداد – مقامی              18،532                   18،491

متعدد ادوارِ قبل از کی مقدار کو موجودہ دور کی پریزنٹیشن کے مطابق بنانے کے لیے از سر نو زمرہ بند کیا گیا ہے۔

یکم جولائی 2008ء سے شروع ہونے والے دور کے لیے معلومات میں کنٹری وائیڈ کا حصول شامل ہے۔

یکم جنوری 2009ء سے شروع ہونے والے دور کے لیے معلومات میں میرل لنچ کا حصول  شامل ہے۔ اس سے قبل کے ادوار کو نئے سرے سے بیان نہیں کیا گیا۔

یہ معلومات ابتدائی ہے اور پیش کرتے وقت  ادارے کے موجود و دستیاب ڈیٹا کی بنیاد پر تیار کی گئی ہے۔

 

بینک آف امریکہ کارپوریشن اور ماتحت ادارے

مفاہمت ۔ منظم شدہ برائے GAAP

——————————–

(ڈالرز ملین میں)

ادارہ گلوبل کارڈ سروسز کو منظم شدہ بنیادوں پر رپورٹ کرتا ہے۔ منظم شدہ بنیادوں پر رپورٹنگ ایک مستقبل طریقہ ہے جس سے انتظامیہ گلوبل کارڈ سروسز کے نتائج کا اندازہ لگاتاہے۔

منظم شدہ بنیادوں پر یہ فرض کیا جاتا ہے کہ سیکورٹائزڈ قرضہ جات فروخت نہیں کیے گئے اور ان قرضہ جات پر آمدنی کو آمدنی کو بالکل اسی صورت میں پیش کیا جاتا ہے کہ قرضہ جات (جیسے زیر تحویل قرضہ جات) فروخت نہیں کیے گئے اور موجود ہیں۔

قرضہ جاتی سیکورٹائزیشن ایک متبادل فنڈنگ عمل ہے جو ادارہ متنوع فنڈنگ ذرائع کے لیے استعمال کرتا ہے۔ قرضہ جاتی سیکورٹائزیشن خصوصی مقاصد کے لیے تیار کی گئی آف بیلنس شیٹ کو قرضہ جات کی فروخت کے ذریعے منجمد بیلنس شیٹ سے قرضہ جات کو خارج کرتا ہے جو ادارے کے منجمد مالیاتی بیانات سے باہر ہوتی ہے۔ یہ امریکہ میں عمل عام طور پر تسلیم شدہ اکاؤنٹنگ کے قوانین (GAAP) کے مطابق ہے۔

گلوبل کارڈ سروسز کے نتائج کو سمجھنے کے لیے منظم کردہ پورٹ فولیو کی کارکردگی بہت ہے ہے کیونکہ یہ کاروبار کے مکمل پورٹ فولیو کے نتائج کو ظاہر کرتی ہے۔ کاروباری کی جانب سے سیکورٹائزڈ قرضہ جات مستقلاً فراہم کیے جاتے ہیں اور وہ بھی انہی تحریری معیارات اور جاری مانیٹرنگ پر منحصر ہیں جو زیر تحویل قرضہ جات کے لیے ہیں۔ مزید برآں، محفوظ اضافی خدماتی آمدنی ویسے ہی کریڈٹ خطرے اور سودی نرخ کی از سر نو قیمت پر ظاہر کی جاتی ہے جیسے کہ زیر تحویل قرضہ جات کے لیے۔ گلوبل کارڈ سروسز کے منظم شدہ آمدنی بیانات زیر تحویل بنیادوں پر اس طرح مختلف ہیں:

         منظم کردہ خالص سودی آمدنی میں گلوبل کارڈ سروسز کی زیر تحویل قرضہ جات پر خالص سودی آمدنی اور سیکورٹائزڈ قرضہ جات پر سودی آمدنی تفریق سیکورٹائزڈ قرضہ جات سے متعلق قیمتوں کے تعین پر داخلی فنڈز کی منتقلی شامل ہیں۔

         منظم کردہ غیر سودی آمدنی میں گلوبل کارڈ سروسز کی زیر تحویل بنیادوں پر خالص غیر سودی آمدنی تفریق کارڈ آمدنی کے متعدد اجزاء کی از سر نو ترتیب (جیسے اضافی سروسنگ آمدنی) شامل ہیں تاکہ منظم شدہ خالص سودی آمدنی اور کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی کو ریکارڈ کیا جا سکے۔ غیر سودی آمدنی، زیر تحویل اور منظم کردہ دونوں بنیادوں پر، میں  صرف-سودی اسٹرپ کی ایڈجسٹمنٹ کے اثرات بھی شامل ہیں جو کارڈ آمدنی میں ریکارڈ کی جاتی ہے جبکہ انتظامیہ اس اثر کو عالمی کارڈ سروسز میں منظم کرتی ہے۔

         کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی زیر تحویل قرض جات پر کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی کو ظاہر کرتی ہے ساتھ ساتھ سیکورٹائزڈ قرضہ جاتی پورٹ فولیو سے متعلقہ حقیقی کریڈٹ نقصانات بھی شامل ہیں۔

 

گلوبل کارڈ سروسز

                                                تین ماہ اختتام 31 مارچ 2009ء

                                                ——————————

                                      منظم کردہ بنیادوں پر (1)                 سیکورٹائزیشن کے اثرات (2)           زیر تحویل بنیادوں پر

                                      ——————                 ———————             ——–

خالص سودی آمدنی (3)                   5,207                     (2,391)                            2,816

غیر سودی آمدنی:

کارڈ آمدنی                                    2,115                     244                                 2,359

دیگر تمام آمدنی                             135                       (35)                       100

                                      —–                       —–                       ——

کل غیر سودی

آمدنی                                2،250                    209                       2،459

                                      ———                  ——-                    ——–

کل آمدنی، خالص

از سودی اخراجات                         7,457                     (2,182)                  5,275

 

کریڈٹ نقصانات کےلیے فراہمی                   8,221                     (2,182)                  6,039

غیر سودی اخراجات                       2,075                                                                   2,075

                                      ———                  ——–                   ———

آمدنی (نقصان) قبل

از انکم ٹیکسز                     (2,839)                                                                 (2,839)

انکم ٹیکس اخراجات

(فائدہ) (3)                          1،070                                                1،070

                                      ——-                    ———                  ——–

خالص آمدنی (نقصان)            (1،769)ڈالرز                                        (1،769) ڈالرز

                                      ======                =====                  =======

 

اوسط – کل قرضہ جات

و لیزز                              224,406                 (102,672)               121,734

 

                                                تین ماہ اختتام 31 مارچ 2009ء

                                                ————————–

                                      منظم کردہ بنیادوں پر (1)                  سیکورٹائزیشن کے اثرات (2)           زیر تحویل بنیادوں پر

                                      ——————                 ———————             ——–

خالص سودی آمدنی (3)                   4,527 ڈالرز                                (2,055) ڈالرز                    2,472ڈالرز

غیر سودی آمدنی:

کارڈ آمدنی                                    2,720                              704                                           3,424

دیگر تمام آمدنی                             621                                 (65)                                556

                                      —–                                 —–                                ——

کل غیر سودی

آمدنی                                3,341                              639                                           3,980

                                       ———                            ——-                               ——–

کل آمدنی، خالص

از سودی اخراجات                         7,868                              (1,416)                            6,452

 

کریڈٹ نقصانات کےلیے فراہمی                   4,312                              (1,416)                            2,896

غیر سودی اخراجات                       2,199                                                                                       2,199

                                      ———                            ——–                                       ——-

آمدنی (نقصان) قبل

از انکم ٹیکسز                     (1،357)                                                                 (1،357)

انکم ٹیکس اخراجات

(فائدہ) (3)                          490                                                   490

                                      ——-                    ———                  ——–

خالص آمدنی (نقصان)            867ڈالرز                                             867ڈالرز

                                      ======                =====                  =======

 

اوسط – کل قرضہ جات

و لیزز                              229,147ڈالرز           (105,176) ڈالرز       123,971 ڈالرز

 

دیگر تمام

                                                تین ماہ اختتام 31 مارچ 2009ء

                                                ————————–

                                      رپورٹ کردہ بنیادوں پر (4)              سیکورٹائزیشن کے اثرات (2)           مرتب کردہ

                                      ——————                 ———————             ——–

خالص سودی آمدنی (3)                   (1,780)ڈالرز                     2,391 ڈالرز                                611 ڈالرز

غیر سودی آمدنی:

کارڈ آمدنی (نقصان)                        534                                 (244)                               290

ایکوئٹی سرمایہ کاری آمدنی              1،326                                                                   1،326

ڈیٹ سیکورٹیز کی فروخت

پر فائدے                                     1،471                                                                   1،471

دیگر تمام آمدنی (نقصان)                  2,591                              35                                   2,626

                                      —–                                —–                                ——

کل غیر سودی

آمدنی                                5,922                              (209)                               5,713

                                      ———                            ——-                              ——–

کل آمدنی، خالص

از سودی اخراجات                         4,142                              2,182                              6,324

 

کریڈٹ نقصانات کےلیے فراہمی                   (677)                               2,182                              1,505

انضمام و تنظیم نو کے اخراجات                  765                                                                      765

دیگر تمام غیر سودی اخراجات                    291                                                                                291

                                      ——                                ——                                ——

آمدنی (نقصان) قبل

از انکم ٹیکسز                     3,763                                                                             3,763

انکم ٹیکس اخراجات (3)                  792                                                                       792

                                      ——-                              ———                            ——–

خالص آمدنی (نقصان)            2،971ڈالرز                                                           2،971ڈالرز

                                      ======                          =====                     =====

 

اوسط – کل قرضہ جات

و لیزز                              168,450 ڈالرز                   102,672 ڈالرز                   271,122 ڈالرز

 

                                                تین ماہ اختتام 31 مارچ 2009ء

                                                ————————–

                                      رپورٹ کردہ بنیادوں پر (4)              سیکورٹائزیشن کے اثرات (2)           مرتب کردہ

                                      ——————                 ———————             ——–

خالص سودی آمدنی (3)                   (1،856)ڈالرز                     2,055 ڈالرز                                199 ڈالرز

غیر سودی آمدنی:

کارڈ آمدنی (نقصان)                       663                                 (704)                               41

ایکوئٹی سرمایہ کاری آمدنی              268                                                                      268

ڈیٹ سیکورٹیز کی فروخت

پر فائدے                                     220                                                                      220

دیگر تمام آمدنی (نقصان)                  (264)                               65                                   (199)

                                      —–                                —–                                ——

کل غیر سودی

آمدنی                                887                                 (639)                               248

                                      ———                            ——-                              ——–

کل آمدنی، خالص

از سودی اخراجات                         (969)                               1،416                              447

 

کریڈٹ نقصانات کےلیے فراہمی                   (1،128)                            1،416                              447

انضمام و تنظیم نو کے اخراجات                  170                                                                      170

دیگر تمام غیر سودی اخراجات                    176                                                                                176

                                      ——                               ——                               ——

آمدنی (نقصان) قبل

از انکم ٹیکسز                     (187)                                                                    (187)

انکم ٹیکس اخراجات (3)                  49                                                                        49

                                      ——-                              ———                            ——–

خالص آمدنی (نقصان)            (236)ڈالرز                                                             (236)ڈالرز

                                      ======                         =====                        =====

 

اوسط – کل قرضہ جات

و لیزز                              133,883 ڈالرز                   105,176 ڈالرز                   239,059 ڈالرز

——————————————–

 

(1)  کریڈٹ نقصانات کے لیے فراہمی کریڈٹ نقصانات پر زیر قبضہ قرضہ جات کے ساتھ سیکورٹائزڈ لون پورٹ فولیو میں حقیقی کریڈٹ نقصانات کی نمائندگی کرتی ہے۔

(2)  خالص سودی آمدنی پر سیکورٹائزیشن امپیکٹ/آف سیٹ فنڈزٹرانسفر پرائسنگ میتھوڈولوجی کی بنیاد پر دیا جاتا ہے جوکاروباروں کے لیے متعین فنڈنگ اخراجات کے مطابق ہوتا ہے۔

(3)  FTE بنیاد پر 

(4)  کریڈٹ اخراجات کے لیےفراہمی گلوبل کارڈ سروسز سیکورٹائزیشن آف سیٹ کے ساتھ تمام دیگرشعبہ جات  میں کریڈٹ نقصانات کو ظاہر کرتی ہے۔

اس سے قبل کے ادوارکی تعداد میں موجود  مقدار کو موجودہ دور کی پریزنٹیشن کے مطابق بنانے کے لیے از سر نو زمرہ بند کیا گیا ہے۔

یکم جولائی 2008ء سے شروع ہونے والے دور کے لیے معلومات میں کنٹری وائیڈ کا حصول شامل ہے۔

یکم جنوری 2009ء سے شروع ہونے والے دور کے لیے معلومات میں میرل لنچ کا حصول  شامل ہے۔ اس سے قبل کے ادوار کو نئے سرے سے بیان نہیں کیا گیا۔

یہ معلومات ابتدائی ہے اور پیش کرنے کے وقت پر موجودہ ادارے کے دستیاب ڈیٹا کی بنیاد پر تیار کی گئی ہے۔

 

ذریعہ: بینک آف امریکہ

رابطہ: سرمایہ کاروں کے لیے: کیون اسٹٹ، +1-704-386-5667، لی میک انٹائر، +1-704-388-6780، یا گریس یون، +1-212-449-7323،

یا رپورٹرز کے لیے: اسکاٹ سلویسٹری، +1-980-388-9921، scott.silvestri@bankofamerica.com، تمام برائے بینک آف امریکہ

تصویر: http://www.newscom.com/cgi-bin/prnh/20050720/CLW086LOGO-b

(BAC)